”عمران شاہ پر اس چیز کی پابندی لگائی جائے تا کہ وہ ۔۔۔“ داود چوہان نے چیف جسٹس سے عمران شاہ پر کونسی پابندی لگانے کی استدعاکی ؟ جان کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہ رہ پائیں گے

”عمران شاہ پر اس چیز کی پابندی لگائی جائے تا کہ وہ ۔۔۔“ داود چوہان نے چیف ...
”عمران شاہ پر اس چیز کی پابندی لگائی جائے تا کہ وہ ۔۔۔“ داود چوہان نے چیف جسٹس سے عمران شاہ پر کونسی پابندی لگانے کی استدعاکی ؟ جان کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہ رہ پائیں گے

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )چیف جسٹس ثاقب نثار نے پی ٹی آئی رہنما عمران شاہ کی جانب سے داود چوہان پر تشدد کے معاملے پر از خود نوٹس نمٹا دیاہے اور انہیں 15 روز میں 30 لاکھ روپے ڈیم فنڈ میں جمع کروانے اور 1800 سی سی گاڑی استعمال کرنے کا حکم دیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق کیس کی سماعت کے دوران عمران شاہ نے داود چوہان سے معافی مانگی اور انہیں گلے لگایا جس پر داود چوہان عدالت میں ہی آبدیدہ ہو گئے ، داود چوہان نے چیف جسٹس سے درخواست کی کہ عمران شاہ پر ایک سال تک چھوٹی گاڑی استعمال کرنے کی پابندی لگائی جائے تاکہ عمران شاہ بھی ہماری طرح سفر کریں ۔

داود چوہان کی درخواست پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ”یہ بڑی گاڑی کے بغیر رہ نہیں پائے گا ، کیوں رہ لو گے بڑی گاڑی کے بغیر ؟” جس پر عمران شاہ نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ ” جو حکم آپ کا “۔چیف جسٹس نے کہا کہ عمران شاہ 1800 سی سی گاڑی استعمال کر سکیں گے ۔چیف جسٹس نے سماعت کے دوران ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ میں از خود نوٹس لے کر کسی پر احسان نہیں کرتا ہوں ، اس طرح کے لوگ فرعون بن جاتے ہیں ، سبق سکھانا چاہتاہوں ۔

دوران سماعت چیف جسٹس کی جانب سے سخت سرزنش کیے جانے پر تحریک انصاف کے رکن سندھ اسمبلی عمران شاہ نے اظہار ندامت کیا اور کہا سوری سر، میں شرمندہ ہوں جس پر چیف جسٹس نے کہا کیا سوری؟ میں نے بچپن میں ملازم کو بیلٹ سے مارا تھا میرے والد نے سبق سکھانے کیلئے مجھے 2 بار مارا۔چیف جسٹس نے پی ٹی آئی کے ایم پی اے سے استفسار کیا کہ عمران شاہ آپ نے شہری کو کتنے تھپڑ مارے تھے؟ جس پر انہوں نے کہا تین سے 4 تھپڑ مارے تھے۔ چیف جسٹس نے کہا آپ کو بھی سر عام اسی طرح 4 تھپڑے مارے جائیں گے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -