خاور مانیکا کا ڈی پی او پاکپتن سے جھگڑا، بالآخر وزیراعظم عمران خان نے بھی خاموشی توڑ دی، وہ بات کہہ دی جس کی کسی کو توقع نہ تھی

خاور مانیکا کا ڈی پی او پاکپتن سے جھگڑا، بالآخر وزیراعظم عمران خان نے بھی ...
خاور مانیکا کا ڈی پی او پاکپتن سے جھگڑا، بالآخر وزیراعظم عمران خان نے بھی خاموشی توڑ دی، وہ بات کہہ دی جس کی کسی کو توقع نہ تھی

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) خاورمانیکا اور ڈی پی او پاکپتن کے جھگڑے پر اب وزیراعظم عمران خان نے بھی خاموشی توڑ دی ہے اور ایسی بات کہہ دی ہے جس کی کسی کو توقع نہ تھی۔ ڈیلی ڈان کے مطابق وزیراعظم ہاؤس میں اینکرپرسنز کے ایک منتخب گروپ سے ملاقات کے دوران وزیراعظم عمران خان نے اپنی اہلیہ کے سابق خاوند خاور مانیکا کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ ’’پولیس اہلکاروں نے خاور مانیکا اور اس کی فیملی پر بندوقیں تانیں، جس پر یہ جھگڑا شروع ہوا۔‘‘ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ وہ سپریم کورٹ کی طرف سے اس معاملے کا نوٹس لیے جانے پر مطمئن ہیں۔

رپورٹ کے مطابق اس ملاقات میں وزیراعظم نے صحافیوں کو اپنے جی ایچ کیو کے دورے کے متعلق بھی بتایا اور ہیلی کاپٹر کے استعمال کے تنازعے پر بھی بات کی۔ ان کا کہنا تھا کہ ’’ہماری حکومت کو تین ماہ دیں، پھر ہماری کارکردگی پر تنقید کریں۔ پہلے تین مہینوں میں ہم ایسا کام کریں گے کہ لوگوں کو واضح فرق نظر آئے گا۔‘‘ وزیراعظم عمران خان کا یہ بھی کہنا تھا کہ وہ گزشتہ ن لیگی حکومت کے دیگر ممالک کے ساتھ کیے گئے تمام معاہدوں پر نظرثانی بھی کریں گے۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار پر تنقید کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ’’آج جو لوگ عثمان بزدار پر تنقید کر رہے ہیں تین مہینے بھی یہی لوگ ان کی تعریف کر رہے ہوں گے۔‘‘

مزید :

قومی -