بیرون ملک موجود پاکستانیوں کے اثاثوں کے معاملے پر ٹی او آرز سپریم کورٹ میں پیش

بیرون ملک موجود پاکستانیوں کے اثاثوں کے معاملے پر ٹی او آرز سپریم کورٹ میں ...
بیرون ملک موجود پاکستانیوں کے اثاثوں کے معاملے پر ٹی او آرز سپریم کورٹ میں پیش

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )گورنر سٹیٹ بینک کی سربراہی میں کمیٹی نے بیرون ملک موجود پاکستانیوں کے اثاثوں کے معاملے پر ٹی او آرز سپریم کورٹ میں پیش کر دیئے۔میڈ یا رپورٹس کے مطابق کمیٹی ایف آئی اے،ایف بی آر اور نیب پر مشتمل جوائنٹ ٹاسک فورس تشکیل دے گی جو پہلے مرحلے میں دبئی سے پاکستانیوں کے اثاثوں کو وطن واپس لائے گی۔سپریم کورٹ میں زیر سماعت بیرون ملک سے پاکستانیوں کے اثاثے واپس لانے کے معاملے میں گورنرسٹیٹ بینک کی سربراہی میں قائم کمیٹی نے ٹی او آرز پر مشتمل رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش کر دی ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایف آئی اے کے پاس یو اے ای میں پاکستانیوں کے اثاثوں کے حوالے سے کافی معلومات ہیں اور کمیٹی سب سے پہلے دبئی سے پاکستانیوں کے اثاثے واپس لانے پر کام کرے گی، کمیٹی پاکستانیوں کے برطانیہ میں موجود اثاثوں سے متعلق ایف بی آر کے پاس معلومات کا بھی جائزہ لے گی۔رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ جوائنٹ ٹاسک فورس بیرون ملک اثاثے رکھنے والوں کو طلب کرکے غیر ملکی اثاثوں کی ملکیت تسلیم کرنے والوں سے منی ٹریل کی وضاحت اور بیان حلفی طلب کرے گی جبکہ غیر ملکی اثاثوں کی منی ٹریل پیش نہ کرنے پر قانون نافذ کرنے والے ادارے اثاثوں کو ضبط کرنے کیلئے کارروائی کریں گے۔جے ٹی ایف میں پیش نہ ہونے والوں کے نام مناسب اقدامات کے لئے سپریم کورٹ کے سامنے رکھے جائیں گے۔ کمیٹی اپنی رپورٹ ہر ماہ سپریم کورٹ میں پیش کرے گی جبکہ کمیٹی اور جوائنٹ ٹاسک فورس قومی اداروں سے معلومات لینے سمیت بیرون ملک سے رجوع کر سکیں گے۔

مزید :

قومی -