صوبے میں امن و امان برقرار رکھنے کیلئے کوئی کسراٹھا نہیں گے: آئی جی 

  صوبے میں امن و امان برقرار رکھنے کیلئے کوئی کسراٹھا نہیں گے: آئی جی 

  

 لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب شعیب دستگیر نے عشرہ محرم الحرام کے دوران صوبے کے تمام اضلاع میں سیکیورٹی کے بہترین انتظامات یقینی بنانے پر سی سی پی او لاہور سمیت تمام آر پی اوز، سی پی اوز اور ڈی پی اوز کو شاباش دیتے ہوئے کہا ہے کہ  عشرہ محرم میں بالعموم اور یوم عاشور پر بالخصوص پولیس فورس دہشت گردی اور کوروناخطرات کے باوجود جس جذبہ ایمانی اور فرض شناسی کے ساتھ فرائض سر انجام دئیے اس پر صرف محکمہ ہی نہیں بلکہ پوری قوم کو آپ پر فخر ہے۔فورس کے نام نشر کردہ وائر لیس پیغام میں آئی جی پنجاب نے کہاکہ محرم کے پہلے دس ایام کے دوران پنجاب پولیس نے مجموعی طور پر 9127 جلوسوں اور 36464 مجالس کی حفاظت کرکے ثابت کیا کہ پنجاب پولیس ہر چیلنج سے نبرد آزما ہونے کی مکمل صلاحیت رکھتی ہے  انہوں نے مزیدکہاکہ کانسٹیبل سے لے کر علیٰ افسران تمام پولیس فورس بشمول ایلیٹ، پنجاب ہائی وے پٹرول، پی سی، ڈولفن، پیرو اور ٹریفک پولیس جبکہ پنجاب پولیس کے تمام شعبے شاباش کے مستحق ہیں جبکہ کورونا کے خطرات کے باوجود افسران وا ہلکاروں جذبہ حب الوطنی سے اپنی ڈیوٹیوں پر ڈٹے رہے وہ قابل تعریف ہے۔انہوں نے مزید کہاکہ تمام مکاتبِ فکرکے علماء، امن کمیٹیوں سمیت تمام شہریوں اوراداروں کابھی شکرگذار ہوں جن کا بھرپورتعاون پنجاب پولیس کوحاصل رہااور  انکے تعاون کی بدولت عشرہ محرم الحرام ایک بار پھر امن و امان کے ساتھ گذر ا۔آئی جی پنجاب نے مزید کہا کہ میں  امید کرتا ہوں کہ مستقبل میں بھی پولیس فورس اسی جذبے سے فرائض ادا کرتے ہوئے صوبے میں امن و امان کی فضاء کو برقرار رکھنے کے لئے کوئی کسر نہیں اٹھا رکھیں گے۔قبل ازیں آئی جی پنجاب شعیب دستگیرنے یوم عاشور پر سنٹرل پولیس آفس کے کنٹرول روم کا دورہ کیا اوردسویں محرم کے مرکزی جلوسوں کی تازہ ترین صورتحال اور سیکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیتے ہوئے آر پی اوز، ڈی پی اوز کووائر لیس پر اہم ہدایات جاری کیں۔ آئی جی پنجاب نے افسران کو ہدایت کی کہ یوم عاشورپر اے کیٹیگری اور حساس جلسوں کے روٹس اور مجالس کی عمارتوں کی چھتوں پر ماہر نشانے بازوں (سنائپرز) کولازمی تعینات رکھا جائے جنہیں موجودہ حالات کی سنگینی اور ڈیوٹی کی حساسیت کے بارے میں فیلڈ افسران نہ صرف موثر بریفنگ دیں بلکہ وقفے وقفے سے ان کی چیکنگ جاری رکھیں۔

 انہوں نے تاکید کی کہ صوبہ بھر میں حساس جلوسوں اور مجالس کے اندر عزاداروں کے تحفظ کیلئے سادہ لباس میں کمانڈوز کو لازمی تعینات رکھا جائے تاکہ شرپسند اور سماج دشمن عناصر کے مذموم عزائم کو ناکام بنایا جاسکے۔ آئی جی پنجاب نے کہا کہ مانیٹرنگ افسران جلوسوں کی تازہ ترین صورتحال سے سیکیورٹی ڈیوٹی پر تعینات افسران و اہلکاروں کوہر لمحہ باخبر رکھیں 

اور جب تک آخری عزادار جلوس یا مجلس کے مقام سے واپس نہ چلا جائے فیلڈ اہلکار اور کنٹرول روم کا تمام عملہ الرٹ ہو کر فرائض سر انجام دے۔ آئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے کہا کہ یوم عاشورپر پولیس فورس نے جدید ٹیکنالوجی کے موثر استعمال کو یقینی بناتے ہوئے دہشتگردوں اور سماج دشمن عناصر پر نظر رکھنے کے لیے پہلی بار صوبے بھر میں یوم عاشور کے مرکزی اور حساس جلوسوں کی ڈرون کیمروں کے ذریعے مانیٹرنگ کو یقینی بنایااور مجموعی طور پر لاہور سمیت صوبے کے تمام اضلاع میں 4 11ڈرون کیمرے استعمال کئے گئے۔انہوں نے مزید بتایا کہ سوشل میڈیا کے ذریعے تفرقہ بازی اور مذہبی منافرت پھیلانے والوں کے خلاف بھرپور کاروائیاں کرتے ہوئے مقدس شخصیات کے متعلق توہین آمیز زبان کے استعمال،تضحیک آمیز اور مذہبی منافرت پر مبنی مواد سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرنے والوں کے خلاف سینکڑوں مقدمات درج کئے گئے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ صوبے کے تمام اضلاع میں پنجاب پولیس کی فیلڈ فارمیشنز نے پاک آرمی کی یونٹس اور رینجرز دستوں کے ساتھ مل کر فلیگ مارچز کا انعقاد کیاتاکہ شہریوں میں احساس تحفظ کی فضا کو اجاگر کیا جاسکے۔

مزید :

علاقائی -