سلامتی کونسل مسلمانوں پر ہونیوالی دہشتگردی کو نظر انداز کر رہی ہے: منیر اکرم 

سلامتی کونسل مسلمانوں پر ہونیوالی دہشتگردی کو نظر انداز کر رہی ہے: منیر ...

  

 نیویارک (آئی این پی)  اقوام متحدہ میں پاکستان کے سفیر اور مستقل نمائندہ منیر اکرم نے کہاہے کہ سلامتی کونسل، اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی سالانہ رپورٹ کونسل کے فیصلے اور اقوام متحدہ کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات پر خاطرخواہ روشنی ڈالنے میں  تا حال قاصر ہے، سلامتی کونسل انتہا پسندوں اور فاشسٹ ہندوتوا گروپوں کی طرف سے مسلمانوں پر  ہونے والی دہشت گردی کو نظرانداز کر رہی ہے۔ پیر کو اقوام متحدہ میں پاکستان کے سفیر اور مستقل نمائندہ نے سکیورٹی کونسل کی مکمل سالانہ رپورٹ کے غیر رسمی اجلاس کے دوران کہا کہ کونسل کی دہشت گردی، فاشزم،نوآبادیات سے متعلق کوششوں کو اجاگر کرنے کے ضم میں نمایاں اصلاحات کی ضرورت ہے۔ کونسل انتہا پسندوں اور فاشسٹ ہندوتوا گروپوں کے دہشت گردی کو نظرانداز کرتے ہوئے القاعدہ اور داعش سے نمٹنے پر  زیادہ توجہ دی ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں آباد طبقوں کے ذریعہ آبادیاتی سیلاب کا مقصد کشمیری عوام کی آزادی اور ان کے آزادانہ حق رائے دہی سے آزاد ہونا اور ان کی مسلم شناخت کو ختم کرنا ہے۔ تب تک  بین الاقوامی برادری تنازعات کی روک تھام کو مستحکم کرنے اور تنازعات کے پر امن حل کو فروغ دینے کی اپنی کوششوں میں کامیاب نہیں ہوسکتی ہے جب تک  اس کی اپنی قراردادیں جان بوجھ کر کچھ لوگوں کے ہاتھوں نظرانداز نہ کر وائی جائیں۔

منیر اکرم

مزید :

صفحہ اول -