نشتر ہسپتال‘ بدتمیزی پر نرسز کا ڈاکٹرز کیخلاف شدید احتجاج 

  نشتر ہسپتال‘ بدتمیزی پر نرسز کا ڈاکٹرز کیخلاف شدید احتجاج 

  

ملتان (وقا ئع نگار)  برن یونٹ ہسپتال میں نائٹ ڈیوٹی پر ڈاکٹر کی سٹاف نرسز کے ساتھ بدتمیزیمعمول بن گئی نرسز  ڈاکٹرز کے خلاف احتجاج کیا ہے۔ایک دوسرے کے خلاف ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ کو درخواستیں دے دیں۔ذرائع کے مطابق برن ہسپتال میں پی جی آر ڈاکٹرز نے نرسز کے ساتھ ہتک آمیز رویہ اور بدتمیزی کرنا معمول بنا لیا ہے اور ہسپتال انتظامیہ(بقیہ نمبر50صفحہ7پر)

 ڈاکٹرز کو فیور دیتی ہے اور ہر معاملے پر نرسز کو قصور وار ٹھہرایا جارہا ہے اس سلسلے میں گزشتہ روز بیس سے زائد نرسز نے ڈاکٹرز اور انتظامیہ کے سوتیلے پن رویے کے خلاف ہسپتال کے گیٹ پر احتجاج کیا اور موقف اختیار کیا کہ رات کی ڈیوٹی میں پی جی آر ڈاکٹر طارق نے ہماری نرسز کے ساتھ گزشتہ رات بدتمیزی کی ہے اور انکو نرسز کی حاضری ودیگر ڈیوٹی کے معاملات چیک کرنے کا اختیار نہیں ہے۔برن یونٹ انتظامیہ کی شہہ پر ڈاکٹرز نرسز کے ساتھ ڈیوٹی معاملات میں اپنا رعب جماتے ہیں اور جو نرس اختلاف رائے کرتی ہے اسکے ساتھ بدتمیزی کی جاتی ہے اور ہم نے ڈاکٹر طارق کے خلاف درخواست دی ہے ہمیں انتظامیہ کی طرف سے دباو تھا کہ ڈاکٹر کے خلاف دی گئی درخواست واپس لے لی جائے۔درخواست دینے والی نرسز کو ایچ او ڈی کی طرف سے زبردستی 6 ماہ کی ٹریننگ کے نام پر نشتر بھیجا جارہا ہے۔احتجاجی نرسز نے کہا کہ لیٹر میں ہمیں برن یونٹ سے ریلیو کرنے کے آرڈرز شامل ہیں۔ہمیں ہسپتال آئی سی یو 3 سال سے زائد عرصہ ڈیوٹی سر انجام دیتے ہو گیا ہے۔اب ہمیں آئی سی یو ٹریننگ کے نام پر نشتر بھیجا جارہا ہے۔ذرائع کے مطابق ہمیں ٹریننگ کا دھوکہ دے کر برن یونٹ ڈیوٹی سے ریلیو کر دیا جائے گا۔ہمارا ہسپتال انتظامیہ اور نشتر ہسپتال انتظامیہ سے پر زور مطالبہ ہے کہ ٹریننگ کے نام پر لیٹر کو فی الفور واپس لیا جائے اور نرسز کے ساتھ ہونے والی ڈاکٹرز کی طرف سے بدتمیزی کی شفاف انکوائری کرائی جائے۔

احتجاج

مزید :

ملتان صفحہ آخر -