آرمی چیف دو روزہ دورے پر کراچی پہنچ گئے،ہمارا مسئلہ وسائل کی عدم دستیابی نہیں بلکہ ترجیحات کا تعین  ہے:جنرل قمر جاوید باجوہ

آرمی چیف دو روزہ دورے پر کراچی پہنچ گئے،ہمارا مسئلہ وسائل کی عدم دستیابی ...
آرمی چیف دو روزہ دورے پر کراچی پہنچ گئے،ہمارا مسئلہ وسائل کی عدم دستیابی نہیں بلکہ ترجیحات کا تعین  ہے:جنرل قمر جاوید باجوہ

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن )چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے سندھ میں  قدرتی آفت سے زیادہ متاثرہ علاقوں  میں ریلیف کے کام کو ترجیح دینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاک فوج  بارشوں اور سیلاب سے متاثرہ آبادی  کو مایوس نہیں کرے گی،پاک فوج وفاقی اور صوبائی حکومتوں  کو منصوبوں کیلئے منصوبہ بندی میں ہر ممکن  تعاون فراہم  کرے گی،ملک کا کوئی شہر بھی کراچی میں سیلاب سے آنے والی قدرتی آفت جیسی سطح کی  صورتحال سے نہیں نمٹ سکتا، ہمارا مسئلہ وسائل کی عدم دستیابی نہیں بلکہ ترجیحات کا تعین ہے،ہرکوئی اس وقت قدرتی آفت سے پیدا صورتحال سے نمٹنے کیلئے متحد ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ  دو روزہ دورے پر کراچی پہنچے،کراچی آمد پر آرمی چیف نے کراچی میں شہری علاقوں میں سیلاب سے پیدا صورتحال کا فضائی جائزہ لیا۔بعد ازاں آرمی چیف نے کراچی کورہیڈ کوارٹرز کا بھی دورہ کیا جہاں چیف آف آرمی سٹاف کو کراچی کی تاریخ میں بدترین شہری سیلاب کی صورتحال کے بارے میں بریفنگ دی گئی اور انہیں سندھ بھر اور بالخصوص کراچی میں سیلابی صورتحال سے نمٹنے کیلئے پاک فوج کی سول انتظامیہ کے ساتھ تعاون اور مدد کے بارے میں بتایا گیا۔آرمی چیف کوآگاہ کیا گیا کہ غیر معمولی بارشوں اورکئی عشروں سے گنجان آبادی اوربغیر منصوبہ بندی کے آباد کاری اور ڈھانچہ جاتی مسائل کی وجہ سے معاملات پیچیدہ ہوئے۔

اس موقع پر آرمی چیف نے کہا کہ پاکستان کا کوئی شہر بھی اس سطح کی قدرتی آفت سے نہیں نمٹ سکتا، ہمارا مسئلہ وسائل کی عدم دستیابی نہیں بلکہ ترجیحات کا صحیح تعین کرنا ہے۔ آرمی چیف جنرل قمر باجوہ نے مزید کہا کہ وفاقی اور صوبائی حکومتوں کی جانب سے جو منصوبے تیار کئے جا رہے ہیں ان میں فوج کی جانب سے ہر ممکن مدد کی جائے گی کیونکہ اس کے مستقبل میں ملک کی معیشت اور سلامتی پر گہرے اثرات مرتب ہوتے ہیں۔آرمی چیف نے کہا کہ اس قدرتی آفت نے ملک بھر میں مستقبل میں اس قسم کی تباہی سے بچنے کیلئے ترجیحات کے تعین کا موقع فراہم کیا ہے۔آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے بارش وسیلاب سے متاثرہ علاقوں میں ریسکیو اور  ریلیف کے کام کی رفتار  پر اطمینان کا اظہار کیا اور ہدایت کی کہ پہلے عام لوگوں والے علاقوں کا بدترین طریقے سے بارشوں اور سیلاب کی زد میں آنیو الے علاقے کے لوگوں کی مدد کیلئے کام کو ترجیح دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی صورت خصوصی طور پر مقامی لوگوں یا برادری کے اثرورسوخ کو ضرورت مندوں کی طرف توجہ یا وسائل منتقل کرنے کی اجازت نہیں ہونی چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ یہ ایک قومی تباہی ہے اور ہر کوئی اس میں متحد ہے۔انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ پاک فوج متاثرہ آبادی کو ان کے مشکل وقت میں مایوس نہیں کرے گی۔آرمی چیف نے گیریژن کے فوجی دستوں کے  خصوصاً محرم الحرام کے دوران امن ومان کی صورتحال کو برقرار رکھنے کے اقدام کو سراہا اور کہا کہ قومی معاشی حب کراچی میں امن پاکستان کی سلامتی اور استحکام کیلئے انتہائی اہم ہے۔انہوں نے کہا کہ صوبہ سندھ اور کراچی میں حالات معمول پر لانے کیلئے کوششیں جاری رہیں گی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق بعد ازاں چیف آف آرمی سٹاف نے ریٹائرڈ، سینئر اور گیریژن کے حاضر سروس فوجی افسران سے بھی ملاقات کی۔انہوں نے ملک کی سلامتی اور دفاع کیلئے ان کے کردار کو سراہا۔قبل ازیں کراچی آمد پر کورکمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل ہمایوں عزیز نے آرمی چیف کا استقبال کیا۔ 

مزید :

قومی -اہم خبریں -