شعبہ لائیوسٹاک کو فروغ دیکر ملکی معیشت میں اضافہ ممکن ہے،حسنین بہادر

شعبہ لائیوسٹاک کو فروغ دیکر ملکی معیشت میں اضافہ ممکن ہے،حسنین بہادر

  

لاہور (لیڈی رپورٹر)صوبہ پنجاب اور امریکہ کے درمیان لائیوسٹاک کے شعبہ میں تعاون کے وسیع تر مواقع موجود ہیں جنہیں فروغ دے کر ملکی معیشت میں خاطر خواہ اضافہ ممکن ہے۔ان خیالات کا اظہار وزیر لائیوسٹاک سردار حسنین بہادردریشک نے امریکی قونصلیٹ لاہور کے اعلیٰ سطحی وفد سے خصوصی ملاقات کے دوران کیا۔ کیتھلین گیبلیسکو، چیف پولیٹیکل اینڈ اکنامک آفیسر کی سربراہی میں امریکی قونصلیٹ لاہور کے وفد نے صوبائی وزیر لائیوسٹاک اور سیکرٹری لائیوسٹاک سے الگ الگ ملاقاتیں کیں۔امریکی وفد کے دیگر اراکین میں زرعی ماہرین کرس رٹیگرز، عصمت رضا اور سیاسی و معاشی آفیسر صدف سعد شامل تھے۔ ملاقاتوں کے دوران پنجاب کے لائیوسٹاک اور زراعت کے شعبہ جات میں باہمی تعاون کو فروغ دینے بارے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

 وفد کی سربراہ کیتھلین گیبلیسکو نے امریکی تعاون سے جاری مختلف پروگرامز بارے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ امریکی ادارے مختلف تحقیقی، تربیتی اور پالیسی سازی میں حکومت پنجاب اور محکمہ لائیوسٹاک سے تعاون کر رہے ہیں جن میں امریکی گائے کے تحقیقی ڈیری فارم کا قیام، ڈیری پروفیشنلز کی تربیت اور ایکسٹینشن سروسز کے فروغ جیسے منصوبہ جات شامل ہیں۔ انہوں نے حکومتی اور نجی سطح پر تحقیق اور تجارت کے شعبوں میں محکمہ لائیوسٹاک سے تعاون کی خواہش کا بھی اظہار کیا۔صوبائی وزیر لائیوسٹاک سردار حسنین بہادر دریشک نے وفد کی جانب سے تعاون کی پیش کش کو سراہتے ہوئے کہا کہ محکمہ لائیوسٹاک ملکی معیشت میں اہم کردار کا حامل ہے لہذا امریکی اداروں سے انفراسٹرکچر، منہ کھر کنٹرول پروگرام،ویٹرنری ایجوکیشن اور جانوروں کی شناخت بارے جامع نظام کی تشکیل میں تکنیکی تعاون کے خواہا ں ہیں۔انہوں نے کہا کہ قابلِ اعتماد ڈیٹا کے حصول بارے عملی اقدامات کرنے کی ضرورت ہے تاکہ نہ صرف پالیسی سازی بلکہ بین الاقوامی تعاون کا حصول ممکن بنایا جا سکے۔سیکرٹری لائیوسٹاک اسد رحمان گیلانی نے دونوں ممالک کے مابین نجی شعبہ میں تعاون کی تجویز کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ان تجاویز سے پنجاب ڈیری سیکٹر کی شرح نمو میں خاطر خواہ اضافہ ممکن بنایا جا سکتا ہے۔ 

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -