مشر ف دور میں این آر او کے تحت قتل کے مقدمات معا ف ہوئے: وکیل رینجرز

  مشر ف دور میں این آر او کے تحت قتل کے مقدمات معا ف ہوئے: وکیل رینجرز

  

  کراچی (آئی این پی) سندھ ہائیکورٹ میں لاپتا افراد کیسز کی سماعت کے دوران رینجرز کے وکیل نے بتایا کہ پرویز مشرف دور میں این آر او آیا تھا جس کے تحت قتل کے مقدمات معاف کیے گئے۔ منگل   کو لاپتہ افراد کی بازیابی سے متعلق کیسز کی ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی۔ دوران سماعت لاپتہ شہری کے اہلخانہ نے بتایا کہ شیخ فیروز پانچ سال سے لاپتہ ہے،جس پر تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ لاپتا شیخ فیروز جنوبی افریقہ سے آیا تھا اور قتل سمیت متعدد مقدمات میں ملوث تھا۔ فیروز پر قتل کے بھی دو مقدمات تھے جو ختم ہوگئے۔ عدالت نے استفسار کیا کہ قتل کے مقدمات کیسے ختم ہوسکتے ہیں؟ جس پر وکیل رینجرز ایڈووکیٹ حبیب احمد نے بتایا کہ حکومت نے خود مقدمات واپس لیے، پرویز مشرف کے دور میں این آر او آیا تھا جس کے تحت ہر طرح کے مقدمات ختم کیے گئے۔ ڈپٹی اٹارنی جنرل نے استدعا کی کہ این آر او کے تحت ختم کیے گیے قتل کے مقدمات کا ریکارڈ طلب کیا جائے۔ عدالت نے لاپتا شہری شیخ فیروز کے خلاف مقدمات پر پراسیکیوٹر جنرل اور ایڈووکیٹ جنرل سے معاونت طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔

وکیل رینجرز

مزید :

صفحہ اول -