ادویات کی خریداری کیلئے تشکیل حکومتی کمیٹیوں کیخلاف درخواست نمٹا دی 

ادویات کی خریداری کیلئے تشکیل حکومتی کمیٹیوں کیخلاف درخواست نمٹا دی 

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ کے مسٹرجسٹس شاہدوحید نے سرکاری ہسپتالوں میں ادویات اور آلات کی خریداری کے لیے تشکیل دی گئی حکومتی کمیٹیوں کے خلاف دائردرخواست نمٹاتے ہوئے درخواست گزار کودادرسی کے لئے متعلقہ اتھارٹی سے رجوع کرنے کی ہدایت کردی، درخواست گزارمعراج عالم کی طرف سے پنجاب حکومت، سیکرٹری سپیشلائز ہیلتھ سمیت دیگر کو فریق بناتے ہوئے موقف اختیارکیا گیا تھا کہ پنجاب حکومت نے سرکاری ہسپتالوں میں ادویات اور آلات کی خریداری کے لئے 24 مختلف کمیٹیاں تشکیل دی ہیں،کمیٹیوں میں ڈاکٹرز کو شامل کیا گیا ہے،کمیٹیوں میں شامل ڈاکٹرز کی سفارش پر ہی کسی کمپنی کو  ادویات ااور الات  کی خریداری کے ٹینڈر جاری ہوں  گے،جس ملک کے ڈاکٹرز دوائی اور لیب ٹیسٹ لکھنے  کے عوض کمیشن وصول کرتے ہوں وہاں ان سے میرٹ اور شفافیت کی کی توقع کس طرح کی جاسکتی ہے،ہسپتالوں میں ادویات اور آلات کی خریداری کے لئے ڈاکٹروں کی کمیٹیاں تشکیل دینا قانونی تقاضوں کے خلاف ہے،عدالت سے استدعاہے کہ ہسپتالوں کی ادویات اور الات  کی خریداری کے لئے تشکیل دی گئی کمیٹیوں کا اقدام کالعدم قرار دیاجائے اورچمبر آف کامرس کے ذریعے ادویات اور الات کی خریداری کا سابقہ طریقہ کار بحال کیاجائے۔

نمٹا دی 

مزید :

صفحہ آخر -