مانگا منڈی، پولیس مقابلہ میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے 2اہلکار شہید 

مانگا منڈی، پولیس مقابلہ میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے 2اہلکار شہید 

  

مانگا منڈی (نما ئندہ خصو صی +نا مہ نگار) پولیس کا ڈاکوؤں کے ساتھ مقابلہ، ڈاکوؤں کی فائرنگ سے2 پولیس اہلکار شہید ہو گئے، ڈاکو موقع سے فرار ہونے میں کامیاب۔ تفصیلات کے مطابق پولیس کو مانگا منڈی قبرستان کے قریب شہری سے 60 ہزار نقدی اور موبائل فون چھیننے کی واردات کی کال موصول ہوئی  جس پر محافظ پولیس موقع پر پہنچی۔ پولیس اہلکاروں کے پہنچتے ہی ڈاکوؤں نے فرار ہوتے ہوئے فائرنگ شروع کر دی۔ پولیس اہلکاروں نے ڈاکوؤں کا تعاقب جاری رکھا۔ مانگا بائی پاس کے قریب ڈاکوؤں کی فائرنگ سے2 اہلکار عباد ڈوگر اور عادل شاہ زخمی ہوگئے جنہیں مقامی ہسپتال لے جایا گیا مگر وہ جانبر نا ہو سکے وقوعہ کی اطلاع ملتے ہی پولیس کے اعلیٰ افسران سمیت بھاری نفری بھی موقع پر پہنچ گئی۔ شہید ہونے والے اہلکاروں میں عادل شاہ موہلنوال جبکہ عباد علی ڈوگر واں کھارا کا رہائشی بتایا گیا ہے۔ فرار ہونے والے ڈاکوؤں کی گرفتاری کیلئے پولیس کا بڑے پیمانے پر سرچ آپریشن جاری ہے شہید ہونے والے دونوں کانسٹیبلز کی میتیں پوسٹ مارٹم کے لیے لاہور منتقل کردی گئی ہیں۔دوسری جانب پولیس مقابلے کی اطلاع ملتے ہی ڈی آئی جی آپریشنز لاہور سہیل چوہدری ہسپتال پہنچ گئے اور ڈی آئی جی آپریشن نے شہید کانسٹیبلز عادل شاہ اور کانسٹیبل عباد ڈوگر کے ورثاء سے اظہار تعزیت کیا۔اس کے علاوہ بتایا گیا کہ وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار نے شہید پولیس اہلکاروں کے لواحقین سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت سوگوار خاندانوں کے ساتھ ہے شہداء کے خاندانوں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے کیوں کہ شہید کانسٹیبلوں نے فرض ادا کرتے ہوئے اپنی جانیں قربان کی ہیں ان کی جر ئا ت اور بہادری کو پوری پنجاب کی عوام سلام پیش کرتی ہے۔واضح رہے کہ تھانہ مانگامنڈی پولیس کی حدود میں پولیس اور ڈاکوؤں کے درمیان یہ اگست کے مہینے میں دوسرا مقابلہ ہوا پہلا پولیس مقابلہ تقریبا 20 اگست کی رات بائی پاس ملتان روڈ پرہوا اس مقابلے میں انچارج رانا مجاہد خود شامل تھے جس میں دو ڈاکو ہلاک ہوگئے جن کی شناخت جمیل احمد اور شبیر احمد کے نام سے ہوئی جبکہ دوسرا پولیس مقابلہ گزشتہ روز 31 اگست کو فجر کی اذان سے قبل ملتان روڈ کلمہ چوک میں ہوا جس میں لاہور پولیس کے دو جوان شہید ہوئے ہیں۔

پولیس مقابلہ

مزید :

صفحہ آخر -