میلسی، مختلف سیاسی گروپ  متحرک، عوامی رابطہ مہم میں تیزی 

میلسی، مختلف سیاسی گروپ  متحرک، عوامی رابطہ مہم میں تیزی 

  

   میلسی(نامہ نگار)میلسی کی سیاست میں انقلابات کی صورت ابھرنے لگی تمام سیاسی گروپ عوامی رابطے مہم میں پہلے سے زیادہ مصروف ہوگئے ۔سابق ضلع ناظم اور کھچی (بقیہ نمبر48صفحہ6پر)

خاندان کے سربراہ محمد ممتاز خان کھچی   نے اپنے صاحبزادے شہزاد خان کھچی کو پی پی 236 میلسی شہر کا آئندہ امیدوار صوبائی اسمبلی ڈیکلیر کر دیا۔صحافیوں سے ملاقات میں  انہوں نے واضح کیا کہ شہزاد خان کھچی ان دنوں مسلسل عوام سے رابطے میں ہیں اور خوشی غمی کی تقریبات میں اپنے اجداد کی طرح شرکت کر رہے ہیں ان کے پی پی 236 سے امیدوار صوباء اسمبلی کا فیصلہ کرنے کے ساتھ ساتھ 25 سال تک ضلع کونسل کے سربراہ  رہنے والے  پنجاب بھر میں اس حوالے سے منفرد ممتاز خان کھچی نے شہزاد خان کی الیکشن مہم   خود  چلانے  کا اعلان کیا ہے وہ طویل عرصہ علیل رہے ہیں اور اب صحت یابی کے بعد پہلی بار انہوں نے نیوز کانفرنس کی ہے۔واضح رہے کہ میلسی شہر کے   اس حلقے سے منتخب ہوکر ان کے حقیقی بھتیجے اور سابق ایم این ایدلاور خان کھچی مرحوم   کے صاحبزادے محمد جہاں زیب  خان کھچی تحریک انصاف کی ٹکٹ پر ایم پی اے اور بعد ازاں   صوباء وزارت کے عہدے پر متمکن ہیں۔ادھر 5 ستمبر کوچیرمین بلاول بھٹو زرداری کے جلہ جیم آنے پر پیپلز پارٹی کے ذرائع کی جانب سے  مختلف سیاسی شخصیات کی۔پی ہی پی میں شمولیت کے دعوے  کییجارہے ہیں جس پر مختلف مفروضے اور قیاس آرائیاں ہیں۔2008 کے الیکشن میں مسلم لیگ ن کے سعید احمد خان منیس دوسرے اور پیپلز پارٹی کے محمود حیات خان ٹوچی بہت کم  ووٹ لے کے تیسرے  نمبر پر رہے دوسری جانب سابق ایم این اے اظہر احمد خان یوسفزء جو شہر میں سوء گیس  کا پراجیکٹ 2002 میں لائے اب مسلم لیگ ن میں 2008 میں شمولیت کر چکے ہیں سوشل میڈیا میں ان کے حامیوں کی  جانب سیحال ہی میں  ان کی مسلم لیگ ق میں مبینہ شمولیت کی قیاس آراء  سپیکر پنجاب چوہدری پرویز الہی  کی تصویر کے ساتھ لگا کر کی گء ہے۔ جس بارے میڈیا میں ان کا واضح بیان نہیں آیا۔الحاج سعید احمد خان منیس جو بدستور مسلم لیگ ن میں ہیں کو اب پی پی 236 میں اظہر احمد خان کے ق میں جانے کی سوشل میڈیا والی مبینہ  صورت کی تصدیق پر نئے امیدوار کی ضرورت ہو گی کیو نکہ  اس سے پہلے ان کے ونگ کے طور پر  مسلم لیگ ن میں شامل میاں ماجد نواز ارائیں سابق ایم پی اے 2018 میں آزاد حیثیت سے الیکشن لڑ چکے ہیں  پی ٹی آء کے ایم این اے محمد اورنگ زیب خان کھچی اور صوباء وزیر محمد جہاں زیب خان کھچی اس وقت"  موسٹ فیورٹ"قرار دیے جارہے  ہیں کیونکہ دلاور خان کھچی کا میلسی کی سیاست پر ایک طویل عرصہ ہولڈ رہا اور اب اربوں روپے کے ترقیاتی کام بھی دونوں سیاسی شخصیات کے کریڈٹ پر ہونے کے ساتھ ساتھ وزیر اعظم عمران خان سے میلسی کے اگلے دوسالوں کیلیے ترقیاتی منصوبوں باریکی گء  خصوصی ملاقات بھی  سیاسی حلقوں میں زیر بحث ہے._جس میں سوء گیس کی مزید علاقوں کو ترسیل۔پارکس کی تعمیر۔الیکٹریفیکیشن. تعلیمی اداروں. ہسپتال کی اپ گریڈیشن اور دیہی علاقوں میں رابطہ سڑکوں کی تعمیر شامل ہییوں مذکورہ سیاسی صورتحال کا دارو مدار اگلے دوسالوں پر زیادہ نظر آرہا ہے۔

سیاسی گروپ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -