’ یہ کون جج صاحب ہیں ؟‘ سپریم کورٹ کا کیس کی سماعت کے دوران استفسار

’ یہ کون جج صاحب ہیں ؟‘ سپریم کورٹ کا کیس کی سماعت کے دوران استفسار
’ یہ کون جج صاحب ہیں ؟‘ سپریم کورٹ کا کیس کی سماعت کے دوران استفسار

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) چینی کی قیمتوں کے تعین سے متعلق کیس کی سپریم کورٹ میں سماعت ہوئی ، دوران سماعت قائم مقام چیف جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیے کہ سپریم کورٹ نے تو معاملے پر کیش جمع کرانے کا کہاتھا ، ہائیکورٹ پوسٹ ڈیٹڈ چیکس کیسے لے رہی ہے ، یہ کون سے جج صاحب ہیں ؟۔

قائم مقام چیف جسٹس کی زیر سربراہی تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی ، عدالت نے معاملے پر توہین عدالت کی درخواست دائر کرنے کی ہدایت کر دی ۔عدالت نے ریمارکس دیے کہ چینی کی قیمتوں کے تعین کے حو الے سے فیصلہ پہلے دے چکے ہیں، اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ عدالتی فیصلے پرعملدرآمد کا نوٹیفکیشن بھی ہو چکا ہے ۔

قائم مقام چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ سپریم کورٹ نے تو کیش جمع کرانے کا کہا تھا ، ہائیکورٹ پوسٹ ڈیٹڈ چیکس کیسے لے رہی ہے ، یہ کون جج صاحب ہیں ، عدالت نے اٹارنی جنرل کو ہدایت جاری کی کہ اس عمل پر توہین عدالت کی درخواست دائر کریں ۔ حکومت کو سمجھنا چاہئے کہ انڈسٹری کو فروغ دینا ہوگا۔ 

مزید :

اہم خبریں -