ن لیگ نے الیکشن سے قبل ہی کنٹونمنٹ بورڈ انتخابات میں حکومت پر دھاندلی کا الزام عائد کر دیا

ن لیگ نے الیکشن سے قبل ہی کنٹونمنٹ بورڈ انتخابات میں حکومت پر دھاندلی کا ...
ن لیگ نے الیکشن سے قبل ہی کنٹونمنٹ بورڈ انتخابات میں حکومت پر دھاندلی کا الزام عائد کر دیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن )نے کنٹونمنٹ بورڈ انتخابات میں حکومت پر دھاندلی کا الزام عائد کر دیا ہے۔

مسلم لیگ (ن )کی رہنماءمریم اورنگزیب اور احسن اقبال ،سعد رفیق اور عطاءتارڑ پر مشتمل وفد نے چیف الیکشن کمشنر سے کنٹونمنٹ بورڈز انتخابات کے حوالے ملاقات کی جس میں کنٹونمنٹ بورڈ کے تحفظات کے حوالے سے آگاہ کیا ۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہاکہ صدر کے آرڈیننس سے واضح ہے ،حکومت شفافیت سے قانون سازی نہیں کر رہی، حکومت ووٹر لسٹوں میں بھی اپنی من مرضی کا اندراج چاہتی ہے، حکومت چاہتی ہے اگلے الیکشن میں وہی لوگ ووٹ ڈالیں جو تحریک انصاف (پی ٹی آئی) چاہتی ہے، ان کا انتخابی اصلاحات کا پورا ایجنڈااپنے پیاروں کو نوازنا ہے، چیف الیکشن کمشنر نے یقین دہانی کرائی ہے کہ الیکشن کمیشن صاف شفاف الیکشن میں اپنا کردار ادا کرےگا، ہم 1971 میں دیکھ چکے ہیں ووٹ کی حرمت نہیں مانی گئی ملک ٹوٹ گیا، 2018 میں بھی ووٹ چوری ہوا۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے اپنے لوگ بتا چکے ہیں کہ جو کروڑوں روپے بیرون ملک سے حاصل کیے گئے، ان کا کس طرح غلط استعمال کیا گیا ؟چوکیداروں کے نام پہ پیسے منگوائے گئے، کمپیوٹر آپریٹرز اور ڈرائیورز کے نام پہ پیسے منگوائے گئے اور انکے نام پہ پیسہ خوردبرد کیاجاتا رہا.

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ اب تو سوشل میڈیا پہ لوگ یہ بھی کہہ رہے ہیں جس طرح پلاٹوں کی کمپیوٹر بیلٹس سے نتائج نکلتے ہیں، یہ الیکٹرونک ووٹنگ مشینیں بھی اسی طرح کے نتائج دینے کے فارمولے لیکر آئیں گی،ہم چاہتے ہیں الیکشن کمیشن کنٹونمنٹ بورڈ انتخابات میں خاموش تماشائی نہ بنے بلکہ جہاں جو بھی الیکشن کے ضابطہ اخلاق اور قوانین کی خلاف ورزی کرتا ہے ،اس کے خلاف کارروائی کرے تاکہ صاف شفاف الیکشن کے اوپر عوام کا اعتماد بحال ہوسکے.

خواجہ سعد رفیق نے کہاکہ اگر حکومت مینڈیٹ چوری کرنے کی کوشش کرے گی تو اسکا بالکل رد عمل آئے گا ،ان کا منصوبہ ہے کہ الیکشن سے 48 گھنٹے پہلے لوگوں کو اٹھانا چاہتے ہیں،ہماری اطلاعات کےمطابق سی سی پی او لاہورکو وزیراعلیٰ نےبلاکریہ ٹاسک دیاہے،یہ ناقابل قبول روش ہے،ہم ڈٹ کے اس کا مقابلہ کرینگے۔انہوں نے کہا کہ گورنر ہاؤس لاہور میں دھاندلی کا منصوبہ بن رہا ہے،ہم تحریری شکایات جمع کرا دی ہیں، گورنر ہاؤس لاہور میں آزاد امیدواروں کو بلا کر دھمکایا گیا، افسران کے تبادلے کیے جا رہے ہیں۔

عطاءتارڑ نے کہاکہ گوجرانوالہ میں بھی افسران پی ٹی آئی کے کارکن کا کردار ادا کر رہے ہیں، ہم ایسے افسران کو خبردار کرتے ہیں کہ پی ٹی آئی کے کارکنان بننے سے باز رہیں، گجرانوالہ میں ہماری پوزیشن کافی مستحکم ہے، ہم قانونی طور پر بھرپور جنگ لڑیں گے۔ انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کے ایم این اے صاحبان اب ہر جگہ منصوبوں کے اعلان کر رہے ہیں، یہ جھانسہ دے کر عوام کی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں۔

مزید :

قومی -