جوڈیشل کمشن کے قیام کیلئے حکومت اور تحریک انصاف کے درمیان معاہدے پر دستخط

جوڈیشل کمشن کے قیام کیلئے حکومت اور تحریک انصاف کے درمیان معاہدے پر دستخط

 اسلام آباد(خصوصی رپورٹ) جوڈیشل کمشن کے قیام کیلئے حکومت اور پی ٹی آئی کے درمیان معاہدہ طے پا گیا ہے۔ مبینہ دھاندلی کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمشن کا معاہدہ 7 صفحات پر مشتمل ہے۔ حکومت کی جانب سے اسحاق ڈار نے معاہدے پر دستخط کئے جبکہ تحریک انصاف کی جانب سے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین نے دستخط کئے۔ بعد ازاں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا کہ جرگے نے جوڈیشل کمشن کے قیام کیلئے کافی کوششں کی تھیں جس پر ہم تمام سیاسی رہنماؤں کے شکر گزار ہیں۔ کوشش ہے کہ جلد از جلد آرڈیننس جاری ہو جائے۔ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ جوڈیشل کمشن کے قیام کیلئے طویل نشستیں ہوئیں تاہم آج پاکستانی سیاست کی تاریخ کا نہایت اہم دن ہے۔ جوڈیشل کمشن کے قیام سے پاکستان میں جمہوریت مضبوط ہوگی۔ واضع رہے کہ اس سے قبل وزیراعظم نے انتخابات میں مبینہ دھاندلی کی تحقیقات کے لئے جوڈیشل کمشن کے قیام کی منظوری دے دی تھی۔ وزیراعظم محمد نواز شریف کے زیر صدارت مسلم لیگ (ن) کا مشاورتی اجلاس اسلام آباد میں ہوا جس میں ملک کی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیالات کیا گیا اور وزیراعظم نے انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات کے لئے جوڈیشل کمشن کے قیام کی منظوری دی۔ ذرائع کے مطابق جوڈیشل کمشن اپنے قواعد و ضوابط خود طے کرے گا۔ کمشن کو انتخابی دستاویزات تک رسائی کا بھی اختیار ہوگا۔ کمشن کے بیان پر تحریک انصاف قومی اسمبلی میں واپس آئے گی جبکہ دھاندلی ثابت ہونے کی صورت میں وزیراعظم نواز شریف اسمبلی تحلیل کرنے کے پابند ہونگے۔ ذرائع کے مطابق جوڈیشل کمشن 45 روز میں اپنی رپورٹ پیش کرے گا ۔

مزید : صفحہ اول