ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کے خلاف درخواست خارج ،درخواست گزار پیمرا سے رجوع کرسکتا ہے ،لاہورہائی کورٹ

ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کے خلاف درخواست خارج ،درخواست گزار پیمرا سے ...
ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کے خلاف درخواست خارج ،درخواست گزار پیمرا سے رجوع کرسکتا ہے ،لاہورہائی کورٹ

  


لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے صولت مرزا کے بیان کی روشنی میں ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کی میڈیا پر نشر ہونے والی تقریروں پر پابندی عائد کرنے اور پارٹی قیادت سے ہٹانے کے لئے دائر درخواست واپس لینے کی بناءپر خارج کرتے ہوئے قرار دیا کہ درخواست گزار الطاف حسین کی میڈیا کوریج پر پابندی کے لئے پیمرا سے رجوع کرسکتا ہے ۔مسٹرجسٹس اعجازالاحسن نے کاشف سلمانی ایڈووکیٹ کی درخواست پر سماعت شروع کی تودرخواست گزار نے موقف اختیار کیاکہ ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین برطانوی شہری ہیں جبکہ پولیٹیکل پارٹیز ایکٹ کے تحت کوئی بھی غیر ملکی پاکستان کی سیاسی جماعت کا سربراہ نہیں ہو سکتا۔پیمرا قوانین کے تحت الطاف حسین ٹی وی چینلز پر تقاریر کرنے کا قانونی حق نہیں رکھتے۔انہوں نے کہاکہ صولت مرزا کے بیان کی روشنی میں الطاف حسین کو سیاسی جماعت کی سربراہی سے ہٹانے کے احکامات صادر کئے جائیں اور پیمرا کو الطاف حسین کی میڈیا پر نشر ہونے والی تقاریر روکنے کا بھی حکم دے۔ وفاقی حکومت کے وکیل نے کہا کہ الطاف حسین کو عہدے سے ہٹانے اور میڈیا پر تقاریر نشر کرنے سے روکنے کے لئے درخواست قابل سماعت نہیں،درخواست خارج کی جائے، عدالت نے وفاقی حکومت کے موقف کے بارے میں درخواست گزار سے استفسار کریا تو اس نے درخواست واپس لینے کی استدعا کی جو عدالت نے منظور کرلی اور قرار دیا کہ درخواست گزار چاہے تو دادرسی کے لئے پیمرا سے رجوع کرسکتا ہے ۔

مزید : لاہور