ریلوے میں جزا اور سزا کا نظام سختی سے لاگو کیاجائیگا: سعد رفیق

ریلوے میں جزا اور سزا کا نظام سختی سے لاگو کیاجائیگا: سعد رفیق

لاہور(کرائم رپورٹر )وزیر ریلویز خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ غفلت، نااہلی اور کام چوری پر کوئی نرمی نہیں ہوگی، ریلویز میں جزا اور سزا کے نظام کو سختی سے لاگو کیاجائے گا، ٹرین سیفٹی کو یقینی بنانے کے لیے طویل المدت کے ساتھ ساتھ قلیل المدت اقدامات وقت کی ضرورت ہیں۔ ٹرین آپریشن اور سیفٹی کو یقینی بنانے کے لیے پاکستان ریلویز ہیڈکوارٹرز میں اعلیٰ سطح کا اجلاس کئی گھنٹے جاری رہا جس میں چیف ایگزیکٹو آفیسر ریلویز محمدجاوید انور ، مشیر ریلویز انجم پرویز، ممبر فنانس غلام مصطفی،فیڈرل گورنمنٹ انسپکٹر آف ریلویز میاں ارشد، ایڈیشنل جنرل منیجر ٹریفک مقصودالنبی، ایڈیشنل جنرل منیجرانفراسٹرکچر ہمایوں رشید، ایڈیشنل جنرل منیجرمکینکل انصربلادیگر شعبوں کے سربراہوں سمیت اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ وزیر ریلویز نے گذشتہ دوبرسوں میں ہونے والے ٹرین حادثات کی تفصیلی رپورٹ طلب کی اور اگلے پندرہ سے تیس روز میں زیرالتواء تمام انکوائریوں کو مکمل کرتے ہو ئے حکم دیا کہ وہ جرمانہ ، غفلت اور نااہلی کے مرتکب افراد کو عبرت کا نشان بنادیا جائے۔ ریلوے حکام نے رپورٹ پیش کی کہ ملازمین کی کمی کی وجہ سے انہیں معطلی سمیت دیگر سخت سزائیں نہیں دی جاسکتیں کہ چار پانچ برسوں میں محدود بھرتی کی وجہ سے بہت سارے شعبوں میں آپریشنزاورپرفارمنس کے مسائل پیداہورہے ہیں ۔ وزیر ریلویز کو بتایا گیا کہ بعض شعبوں میں ٹیکنکل سٹاف کی کمی تیس سے پچاس فیصد تک ہے ۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ سٹاف کی کمی کی وجہ سے ٹرین آپریشنز اور ٹرین سیفٹی کے معیار متاثر ہوں اس امر پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جا سکتا،۔

مزید : صفحہ آخر