کراچی ،اینٹی کرپشن کا مارکیٹ کمیٹی پر چھاپہ ،3ملازمین گرفتار

کراچی ،اینٹی کرپشن کا مارکیٹ کمیٹی پر چھاپہ ،3ملازمین گرفتار

کراچی(کرائم رپورٹر) مارکیٹ کمیٹی کراچی کے ہیڈ آفس پر محکمہ اینٹی کرپشن حکومت سندھ کے عملے نے مجسٹریٹ کے ہمراہ کارروائی کرکے تین ملازمین کوگرفتارکرکے ریکارڈ قبضے میں لے لیاہے۔ذرائع کے مطابق محکمہ اینٹی کرپشن کروڑوں روپے کے کرپشن کی تحریری شکایات موصول ہوئی تھیں۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روزمحکمہ اینٹی کرپشن کے افسر رتوخان جلبانی کی سربراہی میں اینٹی کرپشن کے عملے نے مجسٹریٹ وسیم احمدکے ہمراہ مارکیٹ کمیٹی کراچی کے ہیڈ آفس گلشن اقبال میں اچانک چھاپہ مارا ، آفس میں موجودتین ملازمین محکمہ اکاؤنٹ کے نثار سومرو ، محکمہ الاٹمنٹ کے جاوید خان اور ریکارڈ کیپر ماموں کو تمام ضروری ریکارڈ سمیت تحویل میں لے لیا گیا۔ذرائع نے بتایا کہ چھاپے کے بعد سندھ کے وزیر برائے زراعت سہیل انور سیال ،مارکیٹ کمیٹی کے چیئرمین علی احمد جوکھیو اور وائس چیئرمین سمیت پورے عملے میں شدید کھلبلی مچ گئی ہے ۔ذرائع نے بتایا کہ سبزی منڈی کو لوٹ کا مال سمجھ کر دوکانوں کی الاٹمنٹ میں کروڑوں روپے ہڑپ کیے گئے ۔دوسری جانب اینٹی کرپشن کے افسر رتو خان جلبانی نے چھاپے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ مارکیٹ کمیٹی میں کروڑوں روپے سے بھی زائد سر عام کرپشن کی تحریری شکایات موصول ہورہی تھیں، چھاپے سے قبل ابتدائی تحقیقات کے بعد کارروائی کی گئی ہے اور اہم ملزمان اور ریکارڈ کو تحویل میں لیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ذمہ دارانہ طریقے سے بغیر کسی دباؤ میں آئے شفاف تحقیقات کریں گے ، جو بھی ملز م ملوث پایا گیا ثبوت کی ساتھ کارروائی کی جائیگی۔ انہوں نے کہا کہ میں نے چیئرمین اور وائس چیئرمین مارکیٹ کمیٹی کو دفتر طلب کیا لیکن وہ تاحال دفتر نہیں آئے ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر