شیر گڑھ ،نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی کے طلباء سڑکوں پرنکل آئے

شیر گڑھ ،نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی کے طلباء سڑکوں پرنکل آئے

شیرگڑھ (نامہ نگار )نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی شیرگڑھ کے بی ٹیک کے طلباء سٹرکوں پر نکل آئے ادارہ نے گذشتہ سمسٹر میں 79 طلبا ء کو داخلہ دیا مگر سمسٹر مکمل ہونے پر ادارے نے طلباء کے امتحان کا انعقادنہ کراسکا کیوں کہ ادارے کے سرحد یو نیورسٹی کے ساتھ با ضابطہ الحاق نہیں کیا گیا ہے اس لئے یونیورسٹی نے ادارے کو ہال نہیں دیا اور طلبا ء کے پہلے سمسٹر کے 8 مہینے مفت میں ضائع ہو گئے اے سی تخت بھا ئی متعلقہ یو نیورسٹی اور دیگر اعلیٰ افسران کے دروازے کھٹکھٹانے کے باوجود ان طلباء کی کو ئی داد رسی نہ ہو سکی مجبور ہو کر سڑکوں پر نکل آئے شاہراہ ملا کنڈ کو ایک گھنٹہ یکطرفہ بندکر رکھا ایس ایچ او شیر گڑھ نے طلباء کے ساتھ کامیاب مذاکرات کے نتیجے میں آج ادارے کے مالک اور طلباء کے درمیان پھر سے مذاکرات کی بنیاد پر طلبا ء کو آج تک احتجا ج کو ملتوی کر نے پرآمادہ کیا طلباء نے مسئلہ حل نہ ہو نے تک احتجاج جا ری رکھنے کا اعلان کر دیا تفصیلات کے مطابق شیر گڑھ میں واقع نیشنل انسی ٹیوٹ اف ٹیکنالوجی کے بی ٹیک طلباء ادارے کی طرف سے مقررہ وقت میں سرحد یونیورسٹی کے زیر اہتمام پہلے سمسٹر کا امتحان منعقد نہ کرائے جا نے کے خلا ف سڑکوں پر نکل آئے ہفتہ کے روز ادارے کے طلباء شیر گڑھ پریس کلب کے سامنے جمع ہو گئے اور وہاں سے مارچ کر تے ہو ئے مین شاہراہ ملا کنڈ پر آئے احتجاجی ریلی شیرگڑھ کے مین بازارمیں شاہ راہ ملا کنڈ پر ایک احتجا جی جلسے کی شکل اختیار کی جلسے سے ادارے میں زیر تعلیم طلباء نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ ادارے کے سرحد یو نیورسٹی کے کوارڈینیٹر باسط نے بی ٹیک میں 79 طلباء کو داخلہ دیا اور ان سے ادارے کا فیس وصول کیامگر سمسٹر مکمل ہو نے پر ادارہ سرحد یونیورسٹی کے زیر اہتمام ان طلبا ء کا پہلے سمسٹر کا امتحان منعقد نہ کرا سکا اور طلبا ء کو مختلف ہیلوں بہانوں سے ٹرخاتے رہے طلبا ء جب تنگ آگئے تو انہوں نے اے سی تخت بھائی سمیت محکمہ تعلیم کے اعلیٰ افسران اور متعلقہ یونیورسٹی کے ذمہ داران کے دروازے بار بار کھٹکھٹا ئے مگر کسی نے ان کا نہیں سنا اور آخر کار وہ مجبو ر ہر کر سڑکوں پر نکل آئے ادارے کے سرحد یو نیورسٹی کیلئے کوارڈینیٹرباسط اور ادارے کاایک اورمالک مردان کے رہائشی جھوٹ بول کر طلباء کوبلا تاخیر امتحان منعقد کرانے میں لیت و لیل سے کام لے رہے ہیں انہوں نے سرحد یونیورسٹی کے ساتھ ادارے کاالحاق نہیں کرایا ہے انہوں نے طلبا ء کے قیمتی 8 مہینے مفت میں ضائع کئے جو مزید ہمارے لیئے ناقابل برداشت ہیں ایس ایچ او شیرگڑھ ولایت شاہ خان نے ادارے کے سرحد یو نیورسٹی کیلئے کوارڈینیٹر باسط اور بلڈنگ کے مالک مقصود کو ساتھ لاکر طلباء کے ساتھ ان کے مذاکرات کرائے اور آج پولیس تھانہ شیرگڑھ میں ادارے کے مالک صادق اور دوسرے مالکوں اور ذمہ اران اور طلباء کے درمیان دوبارہ مذاکرا ت کر یں گے جس پر طلباء نے آج تک احتجاج کو مو خر کردیا اس سے قبل طلباء نے مسئلہ حل نہ ہونے ادارہ کوبند کرانے اور طلبا ء کے ساتھ دھوکہ کر نے والے اس ادارے کے ذمہ داران کے خلاف قانونی کاروائی کرانے تک احتجاج جاری رکھنے کا اعلا ن کیا

مزید : کراچی صفحہ اول