مصالحتی مراکز فراہمی انصاف کی عمدہ مثال،دائرہ کار مزید بڑھائینگے:چیف جسٹس منصور علی شاہ

مصالحتی مراکز فراہمی انصاف کی عمدہ مثال،دائرہ کار مزید بڑھائینگے:چیف جسٹس ...

لاہور( آن لائن)چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ سید منصور علی شاہ نے ہفتہ کے روز لاہور سیشن کورٹ میں قائم مصالحتی مراکز کا دورہ کیا، فاضل چیف جسٹس نے مصالحتی مراکز میں بطور میڈی ایٹر کام کرنے والے ججز کے کام کو سراہا، اس موقع پر فاضل چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ سستے اور بروقت انصاف کی فراہمی کی بدولت عوام کا رحجان مصالحت کی جانب بڑھ رہا ہے اور سائلین کی اس دلچسپی کو مد نظر رکھتے ہوئے میڈی ایٹرز کی تعداد میں اضافہ کیا جا رہا ہے ، جو روزانہ کی بنیاد پر میڈی ایشن کا کام کریں گے۔ فاضل چیف جسٹس نے کہا کہ بات چیت اور مصالحت کے ذریعے سو فیصد مقدمات کا نمٹایا جانا عدلیہ کی بڑی کامیابی ہے اور ایسے بہترین نتائج کی وجہ سے مصالحتی سینٹرز کا دائرہ اختیار پنجاب کے تمام اضلاع تک پھیلایا جا رہا ہے۔انہوں نے بتایا کہ سات مارچ سے قائم ہونے والے لاہور کے دو مصالحتی سینٹرزمیں اب تک 80 مقدمات میں سے زیادہ ترمقدمات مصالحانہ طریقے سے نمٹائے جا چکے ہیں،بڑھتے ہوئے اعتماد کے سبب لاہورمیں مصالحتی سینٹرز کی تعداد کو دو سے بڑھا کر تین کر دیا گیا۔ اگلے ہفتے سے پنجاب جوڈیشل اکیڈمی میں صوبہ بھر سے72 ججز کو میڈی ایشن کے تربیتی کورس کا آغاز ہورہا ہے اور ٹریننگ کے بعد پنجاب کے باقی 35 اضلاع میں بھی مصالحتی مراکز اپنا کام شروع کر دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے متعلقہ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں کہ ہر ضلع میں ADR سنٹرز کے قیام کے حوالے سے تشہیر کریں اور اس کے افادیت بارے عام لوگوں کو مطلع کریں۔ فاضل چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ ہمیں ایک نئے دور کا آغاز کرنا اورزیر التواء مقدمات کے کلچرکو ختم کرنا ہے۔

چیف جسٹس

مزید : کراچی صفحہ اول