محکمہ خوراک پنجاب نے گندم خریداری کی پالیسی 2017-18ء کی منظوری دیدی، سرکاری قمیت 1300روپے فی من

محکمہ خوراک پنجاب نے گندم خریداری کی پالیسی 2017-18ء کی منظوری دیدی، سرکاری ...

ملتان ( سپیشل رپورٹر) محکمہ خوراک پنجاب کی جانب سے گندم خریداری پالیسی 2017-18ء کی منظوری دیدی گئی ۔گندم خریداری پالیسی کے مطابق کسانوں کو باردانہ کا اجراء 15اپریل سے جبکہ خریداری کا آغاز 20اپریل سے شروع کیا جائے گا ۔گندم خریداری کی سرکاری قیمت 13سو روپے فی چالیس کلو گرام مقرر 10روپے فی بوری ڈیلیوری چارجز بھی فراہم کئے جائیں گے ۔کاشتکار(بقیہ نمبر52صفحہ12پر )

10بوری فی ایکڑ باردانہ پہلے آئیے پہلے پائیے کی بنیاد پر حاصل کرسکیں گے ۔ کرپشن کی شکایات کے ازالے کیلئے ہر گندم خریداری مرکز پر اینٹی کرپشن کاؤنٹر بھی قائم کیا جائے گا۔ گندم خریداری مراکز پر عملہ و مانیٹرنگ سٹاف 10اپریل تک تعینات کرنے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں ۔تفصیل کے مطابق محکمہ خوراک پنجاب کی جانب سے گندم خریداری پالیسی 2017-18ء کی باضابطہ منظوری دیدی گئی ہے جس کے مطابق صوبہ بھر میں کسانوں سے 1300سو روپے فی چالیس کلو گرام کے حساب سے 40لاکھ میٹرک ٹن گندم خرید کی جائے گی جبکہ فی بوری ڈیلیوری چارجز 10روپے ہونگے کسانوں کو باردانہ کا اجراء کال ڈیپازٹ پر 15اپریل سے شروع ہوگا جبکہ گندم خریداری کا آغاز موسم ٹھیک ہونے کی صورت میں 20اپریل سے شروع کیا جائے ۔کاشتکار 20بوری سے لیکر 100بوری تک باردانہ یکمشت حاصل کرسکیں گے ۔جبکہ تمام اضلاع میں محکمہ خوراک اور ضلعی انتظامیہ کو گندم خریداری مراکز پر خریداری عملہ و مانیٹرنگ سٹاف 10اپریل تک تعینات کرنے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں ۔ پالیسی کی منفرد بات یہ ہے کہ تاریخ میں پہلی مرتبہ گندم خریداری مراکز پر کرپشن کی روک تھام کیلئے اینٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ کا خصوصی کاؤنٹر بھی قائم کیا جائے گا ناجائز کٹوتی یا کرپشن کی شکایت پر موقع پرہی کاروائی عمل میں لائے گا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر