لاہور کے ماڈل تھانےمیں نائب محرر نے تفتیش کیلئے لائی گئی خاتون کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

لاہور کے ماڈل تھانےمیں نائب محرر نے تفتیش کیلئے لائی گئی خاتون کو مبینہ طور ...
لاہور کے ماڈل تھانےمیں نائب محرر نے تفتیش کیلئے لائی گئی خاتون کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )لاہور کے علاقے گارڈن ٹاﺅن کے ماڈل تھانہ کے نائب محرر نے مکروہ دھندے میں ملوث ہونے کے الزام میں تفتیش کیلئے لائی گئیخاتون کو مبینہ طور پر تفتیش کے دوران زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا ۔

نجی ٹی وی نیونیوز نے کے مطابق خاتون کو تفتیش کیلئے ماڈل تھانہ لایا گیاتھا جہاں نائب محرر اعجاز نے مبینہ طور پر خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا اور بعدازاں اسے افسران کے سامنے پیش کیا گیا اور درخواست کی گئی کہ یہ خاتون سڑک کنارے اپنا مکروہ دھندا چلا رہی تھی جس پر اس کیخلاف مقدمہ درج کیا جائے ۔تفتیش کے دوران خاتون نے اپنی کہانی ایس پی ماڈل ٹاﺅن کے سامنے بیان کی اور بتایا کہ گزشتہ رات محرر اعجاز نے اسے مبینہ طور پر جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جس پر متعلقہ اہلکار اعجاز کی گرفتاری کے احکامات جاری کیے گئے لیکن تاحال پیٹی بھائی کیلئے پولیس نے کوئی کارروائی نہیں کی۔جب پولیس کا پی ایس او نائب محرر کی گرفتار کیلئے تھانے پہنچا تو اس وقت تک وہ تھانے کی دیوار پھلانگ کر فرار ہو چکاتھا تاہم تاحال اسے گرفتار نہیں کیا جاسکاہے ۔

اے ایس پی عائشہ بٹ کا کہناتھا کہ معاملے کی شفاف تحقیقات کی جائیں گے اور جلد ہی تمام معاملہ سامنے آ جائے گا ، ایس پی ماڈل ٹاؤن کو آگاہ کردیا گیا ہے اور وہ باقاعدہ انکوائری کررہے ہیں۔ دوسری جانب ڈی آئی جی آپریشنز نے بھی کہا ہے کہ واقعے کا علم ہواہے اور مکمل انکوائری کی جائے گی ۔

مزید : جرم و انصاف