وکلاء کا عدالتوں میں شائستگی کا مظاہرہ کرنا ضروری ہے،جسٹس محمد علی مظہر

وکلاء کا عدالتوں میں شائستگی کا مظاہرہ کرنا ضروری ہے،جسٹس محمد علی مظہر

کراچی (پ ر)سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس محمد علی مظہر نے قانون کے پیشے کے اہم پہلوؤں سے طالب علموں اور وکیلوں کو آگاہی دیتے ہوئے نظم و ضبط اور اپنے پیشے سے دیانتداری کی سخت ضرورت پر توجہ مرکوز کی۔ وہ L'ecole کے سالانہ لاء اینڈ کیریئر نیٹ ورکنگ ڈنر (Annual Law and Career Networking Dinner)کے مہمانِ خصوصی کے طور پرگفتگو کر رہے تھے، ان کے ہمراہ جسٹس (ریٹائرڈ) سرمد عثمانی، جسٹس آغا فیصل شہاب اور جسٹس جنید غفار شاہد اس عشایئے میں موجود تھے۔عدلیہ کے دوسرے ممتاز ارکان اور قانونی برادری اور قانون کے طلباء بھی عشایئے کے دوران موجود تھے۔مذکورہ عشایئے میں مختلف معزز قانونی اداروں کے نمائندوں، جیسے Haider MottaBNR, LMA Ebrahim Hossain, Khalid Anwer & Co سمیت دیگر ادارے بھی شامل تھے۔اپنی متاثر کن اور بصیرت افروز کلیدی تقریر میں، جسٹس مظہر نے طلباء اور وکلاء کو قانونی پیشے کے اہم پہلوؤں سے آگاہی دی، اور ان کی نظم و ضبط کی ضرورت پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے، سقراط جیسے فلسفیوں کا حوالہ دیتے ہوئے. انہوں نے کہا کہ وکلاء اور ججوں کو عدالتوں میں شائستگی کا مظاہرہ کرنا ضروری ہے۔ہر سال، L'ecole قانون کے طلباء اور عدلیہ کے اہم ارکان سمیت قانونی برادری کے لئے سالانہ لاء اینڈ کیریئر نیٹ ورکنگ ڈنر کی میزبانی کرتا ہے۔اعلیٰ درجے کی پڑھائی کے لئےL'ecole سب سے قدیم اور سب سے زیادہ کامیاب ادارہ ہے جو کراچی میں لندن کے انٹرنیشنل لاء پروگرام فراہم کرتا ہے. یہ پروگرام گزشتہ 20 برسوں سے چل رہا ہے۔ بہترین مطالعہ کے لئے L'ecole کے پاس سب سے زیادہ قابل اور علمی فیکلٹی ممبران ہیں، جنہوں نے اس قابل ذکر پیشہ ورانہ ادارے سے گریجویشن کیا ہے اور اب قانونی برادری کے اہم ارکان ہیں۔ L'ecole کے انڈر گریجویٹ پروگرام کے لاء سوسائٹی یوزر کو ڈائریکٹر انڈر گریجویٹ انٹرنیشنل پروگرامز بیرسٹرزارا شاہین اعوان کی سرپرستی حاصل ہے۔نیٹ ورکنگ سیشن کمپنیوں کے نمائندوں اور قانون کے طلباء کو ذاتی اور پیشہ ورانہ تجربات میں شریک کرتا ہے۔ قانونی کمپنیوں کے لئے یہ ایک مثالی موقع ہوتا ہے، کہ وہ اپنے آپ کو جاننے کے لئے L'ecole

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر