دوست نے کلاس فیلو کو مار کر خودکشی کر لی ، شوہر کے ہاتھوں بیوی قتل، حادثے میں ماں بیٹا جاں بحق، 1لاش بر آمد

دوست نے کلاس فیلو کو مار کر خودکشی کر لی ، شوہر کے ہاتھوں بیوی قتل، حادثے میں ...

وہاڑی ‘ رحیمیار خان ‘ صادق آباد(بیورو رپورٹ ‘ نمائندہ خصوصی ‘ تحصیل رپورٹر ) دوست نے کلاس فیلو کو مار کر خودکشی کر لی ‘ شوہر کے ہاتھوں بیوی قتل وہاڑی سے بیورو رپورٹ ‘ نمائندہ خصوصی کے مطابق 22 پل کے قریب دوست نے دوست کو گولی مار کر خودکشی کرلی دونوں دوست موقع پر ہلاک ہوگئے پولیس نے نعشیں تحویل میں لے کر کاروائی شروع کردی پولیس ذرائع کے مطابق دونوں لڑکے نویں کلاس کے طالب علم تھے دونوں کا تعلق چک نمبر 18 ڈبلیو (بقیہ نمبر40صفحہ7پر )

سے ہے اور دونوں پرانے دوست تھے ہلاک ہونے والوں میں 20 سالہ وسیم اکرم اور18 سالہ طلحہ شامل ہیں گھر والے دونوں لڑکوں کودوستی سے منع کرتے تھے جبکہ ڈی ایس پی صدر خالد جاوید جوئیہ اور ایس ایچ او تھانہ صدر وھاڑی عمران صدیقی جائے وقوعہ پر پہنچ کر جائے وقوعہ کا معائنہ کیا ابتدائی تفتیش کے مطابق ڈی ایس پی نے بتایا کہ دونوں نوجوانوں کے ناجائز تعلقات تھے بڑے لڑکے وسیم نے پہلے چھوٹے لڑکے طلحہ کو فائر مار کر پھر خودکشی کر لی پولیس نے ہلاک ہونے والوں کی نعشیں قبضہ میں لیکر کاروائی شروع کردی ہے ایس ایچ او تھانہ صدر عمران صدیقی نے کہا کہ انکے ورثاء بھی اس وقوعہ کو اسی طرح تصدیق کرتے ہیں۔ رحیم یار خان ‘ صادق آباد سے بیورو رپورٹ ‘ تحصیل رپورٹر کے مطابق ناجائز تعلقات کاشبہ، شوہر نے بھائی اور ماں کی مدد سے 23سالہ بیوی کو چھریوں کے پے در پے وار کرکے موت کے گھاٹ اتاردیا، شوہر گرفتار، دیگر فرار، پولیس نے لاش تحویل میں لیکر پوسٹ مارٹم کیلئے ہسپتال منتقل کردی۔ والد کی رپورٹ پر مقدمہ درج، کارروائی شروع۔ تفصیل کے مطابق تھانہ کوٹ سمابہ کی حدود چک179پی کے علاقہ میں شوہر ملزم رمیش عرف راجو کو اپنی 23سالہ بیوی روشنی مائی پر اس کے قریبی رشتہ دار گھیلو جی کے ساتھ ناجائز تعلقات کاشبہ تھا جس نے گزشتہ روز موقع پاکر بھائی حاکم جی اور والدہ نیموں مائی کی مدد سے بیوی کو چھریوں کے پے در پے وار کرکے موت کے گھاٹ اتاردیا، اطلاع پاکر پولیس نے موقع پر پہنچ کر ملزم شوہر رمیش عرف راجو کو گرفتارکرلیا اورمقتولہ روشنی مائی کی لاش تحویل میں لیکر پوسٹ مارٹم کیلئے ہسپتال منتقل کردی جبکہ دیور حاکم جی اور ساس نیموں مائی موقع سے غائب ہوگئے، چک71پی کے رہائشی والد پریما جی کی رپورٹ پر پولیس نے داماد سمیت تین ملزمان کے خلاف قتل کامقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی۔قومی شاہراہ پرتیز رفتار مسافر بس نے موٹر سائیکل سوار کچل ڈالا، ماں بیٹا موقع پر جاں بحق، 22سالہ نوجوان شدیدزخمی مختلف حادثات میں زخمی ہونے والے 40 افراد ہسپتال میں زیرعلاج۔ تفصیل کے مطابق چک173این پی کی رہائشی 50 سالہ مائی بانو،3سالہ نصر اللہ اور 22سالہ غلام یاسین جو موٹر سائیکل پرسوار ہوکر قریبی رشتہ داروں کو ملنے جارہے تھے کہ قومی شاہراہ پر تیز رفتار مسافر بس نے بے قابو ہوکرانہیں کچل ڈالا جس کے نتیجہ میں مائی بانو اور کمسن نصر اللہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی دم توڑگئے جبکہ22سالہ غلام یاسین شدیدزخمی ہوگیا جسے ریسکیو نے طبی امدادکیلئے ہسپتال منتقل کردیا، جبکہ مختلف حادثات میں زخمی ہونے والے40افراد جن میں چک 91پی کارہائشی5سالہ محمد حیدر، شاہ گڑھ کا 11سالہ وجے جی، اقبال آباد کی65سالہ عظیماں مائی، دڑی عظیم خان کی 35سالہ شبیراں بی بی، عطاء کریم کالونی کی35سالہ رضیہ بی بی، راجن پور کا32سالہ غلام محمد، کشمور کا56سالہ محمدمنظور،ڈیرہ اسماعیل خان کا20سالہ عارف علی، گڑھی اختیارخان کا15سالہ محمد شبیر، چوک چڈھڑ کا 60سالہ بہادر ، چک56کا17سالہ نانک جی، جناح پارک کا18سالہ محمد حامد، 25سالہ عبید، فتح پور کمال کا60سالہ رستم علی، عباسیہ ٹاؤن کا34 سالہ محمد ععمیر اور گھوٹکی کارہائشی20سالہ محمد لقمان وغیرہ کو ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے ۔زہریلی چیز کھانا والا65سالہ نامعلوم شخص ہسپتال میں دم توڑگیا۔ شناخت کیلئے لاش سرد خانہ منتقل، تاحال شناخت نہ ہوپائی، تفصیل کے مطابق گزشتہ سے پیوشتہ شب 65سالہ نامعلوم شخص کو نامعلوم افراد نے زہریلی کھانے پر بے ہوشی کی حالت میں تحصیل لیاقت پور کے علاقہ الہ آباد سے شیخ زید ہسپتال رحیم یارخان منتقل کردیا جہاں دو روز تک طبی امداد کے باوجود نامعلوم شخص جانبرنہ ہوپایااور دم توڑگیا، شناخت اور ورثاء کی تلاش کیلئے ہسپتال انتظامیہ نے لاش سرد خانہ امانتاً رکھ دی۔والدین کی ڈانٹ اور گھریلوجھگڑوں سے دلبرداشتہ ہوکر 5افراد کااقدام خودکشی، تفصیل کے مطابق کشمور کی رہائشی12سالہ کمسن انیسہ بی بی، باغ وبہار کی16سالہ عظمی بی بی، چک89پی کی 18سالہ رضیہ بی بی ، بستی رئیس محمد رمضان کی 20 سالہ میمونہ بی بی اور ڈہرکی کارہائشی15سالہ ظہوالدین نے والدین کی ڈانٹ اور آئے روز کے گھریلوجھگڑوں سے دلبرداشتہ ہوکر کالا پتھر اور سپرے پی لیا، حالت غیر ہونے پرورثاء طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال رحیم یارخان منتقل کیا جہاں پانچوں افراد کو طبی امداد فراہم کی جارہی ہے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر