سیم نالہ منصوبہ میں 35 کروڑ فراڈ کی نشاندہی ہو چکی ہے ‘ چوہدری مسعود

سیم نالہ منصوبہ میں 35 کروڑ فراڈ کی نشاندہی ہو چکی ہے ‘ چوہدری مسعود

لیاقت پور(نامہ نگار)پاکستان تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی چوہدری مسعود احمدنے کہاہے کہ ان کے حلقہ میں تعمیر کئے گئے سیم نالہ کے منصوبہ میں ایک ارب روپے کی کرپشن کی گئی ہے۔ وزیراعلیٰ معائنہ ٹیم 35کروڑروپے فراڈ کو رپورٹ کرچکی ہے مگر تاحال اعلیٰ افسران کے کان پر جوں تک نہیں رینگی، صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ انہوں نے وزیراعلیٰ سے اس منصوبے کی(بقیہ نمبر34صفحہ12پر )

شفافیت جانچنے کے لئے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم بنانے کی استدعا کی تھی۔ جس پر انہوں نے چیف سیکرٹری پنجاب کی سربراہی میں جے آئی ٹی تشکیل دے کر اُس کا ڈائریکٹو جاری کردیاہے۔ ٹیم میں سیکرٹری ایری گیشن اور ڈائریکٹر جنرل انٹی کرپشن بھی شامل ہوں گے۔ انہوں نے کہاکہ محکمہ ایری گیشن میں تعینات ہونے والے نئے افسران اپنے پرانے پیٹی بھائیوں کو شیلٹر دینے کی کوشش کررہے جس کی وجہ سے تاحال اس بڑے سکینڈل کی تحقیقات شروع نہیں ہوسکیں۔ انہوں نے کہاکہ علاقہ عباسیہ کے 200چکوک کے ہزاروں خاندانوں کا معاشی قتل عام کرنے والے محکمہ انہار کے افسران واہلکاران دندناتے پھررہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ پٹھانوں کے چکوک میں سیم پر قابو پانے کے لئے فائیو آر ڈرین کا نیا منصوبہ تیار کیاگیاہے۔ جس کا پی سی ون مکمل کرکے آئندہ مالی سال کے ڈویلپمنٹ پروگرام میں شامل کرنے کی کوشش کی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ عباسیہ کے ذریعے تعمیر سیم نالے پر ٹیوب ویل چھوٹے بڑے پلوں اور کھالوں کی کراسنگ کے لئے فنڈز منظور کرانے کی منصوبہ بندی بھی کی گئی ہے۔ اس موقع پر سابق ایم پی اے چوہدری محمود احمد اور دیگر عمائدین علاقہ بھی موجود تھے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر