بیٹے کی مدد کے لئے 61 سالہ دادی نے اپنے پوتے کو جنم دے دیا

بیٹے کی مدد کے لئے 61 سالہ دادی نے اپنے پوتے کو جنم دے دیا
بیٹے کی مدد کے لئے 61 سالہ دادی نے اپنے پوتے کو جنم دے دیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکہ میں بیٹے کی مدد کے لیے 61سالہ دادی نے اپنے پوتے کو جنم دے کر طبی ماہرین کو حیران کر دیا ہے۔ این بی سی نیوز کے مطابق اس 61سالہ سیسائل ایلج نامی خاتون کا بیٹا میتھیو ایلج ہم جنس پرستی تھا اور اس نے ایلیٹ ڈوگرٹے نامی ایک اور مرد کے ساتھ شادی کر رکھی تھی۔ اب وہ دونوں چاہتے تھے کہ ان کے ہاں اولاد بھی پیدا ہو۔ اس پر میتھیو نے اپنی والدہ کو سروگیٹ (متبادل ماں)بننے پر اورایلیٹ ڈوگرٹے نے اپنی بہن لیا یریب کو اپنے بیضے عطیہ کرنے پر رضامند کیا۔

میتھیو اور ایلیٹ نے بالترتیب اپنی ماں اور بہن کو بمشکل رضامند کرنے کے بعد آئی وی ایف کے ذریعے بچہ پیدا کرنے والے ایک کلینک سے رابطہ کیا۔ اس کلینک کے ڈاکٹروں نے میتھیوکے سپرمز اور ایلیٹ کی بہن کے بیضے لے کر ان سے ایمبریو پیدا کیا اور اسے میتھیو کی ماں کے پیٹ میں رکھ دیا۔گزشتہ دنوں اس عمررسیدہ خاتون نے امریکی شہر اوماہا کے نیبراسکا میڈیکل سنٹر میں ایک صحت مند بچے کو جنم دیا ہے۔ بچے کا وزن 6پاﺅنڈ تھا اور وہ بالکل صحت مند تھا۔

طب کی دنیا میں یہ اپنی نوعیت کا منفرد واقعہ ہے جس میں 61سالہ خاتون نے سروگیٹ بن کر بچے کو جنم دیا ہے۔ سیسائل نے 30برس قبل آخری بچے، میتھیو کے چھوٹے بھائی کو جنم دیا تھا اور اس کے بعد اب اپنے پوتے کو پیدا کیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس