سکول مالکان نے لاک ڈاؤن کے باوجود فیس مانگ لی، والدین سراپا احتجاج 

سکول مالکان نے لاک ڈاؤن کے باوجود فیس مانگ لی، والدین سراپا احتجاج 

  

لاہور(دیبا مرزا سے) صوبا ئی حکو مت کی جانب سے تا حال بچو ں کی فیسوں کا معا ملہ حل نہ ہو سکا۔والدین کی طرف سے فیسیں وصول نہ کرنے کا مطالبہ زور پکڑنے لگا  ۔ تفصیلا ت کے مطا بق کرونا وائرس کے باعث صو بہ بھر کے سکو لوں میں چھٹیا ں دے دی گئیں تھیں جسکی وجہ والدین بچو ں کی پڑھا ئی کی وجہ سے پریشان ہیں۔ روزنا مہ پا کستان سے گفتگو کر تے ہو ئے مسز طا رق، مسز نعیم، جمیل احمد، رخشندہ، ذوہیب نے کہاکہ سکول بند ہو نے سے ایک طرف تو ہمارے  بچو ں کی پڑھا ئی متا ثر ہو رہی ہے تودوسری طرف سکول انتظا میہ کی جانب سے گھر بیٹھے ہی فیسوں کے بڑے بڑے وا ؤچر وصول ہو رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کاروبا ر بند ہیں تو فیس کہاں سے دیں۔ انہوں نے کہا کہ جب بچوں نے اتنے ماہ سکو ل ہی نہیں جا نا  تو پھر فیس کسی بات کی ادا کریں ہم فیس ادا نہیں کریں گے حکو مت فوری اس کا حل نکا لے جب کہ اس حوالے سے روزنا مہ پاکستان سے بات کر تے ہو ئے پرائیویٹ سکول مالکا ن اور سکول ایسوسی ایشن صدر مرزا کا شف کا کہناہے کہ حکومت سبسڈی دے پنجاب حکو مت کی ذمہ داری ہے کہ وہ تعلیمی معا ملات کو ترجیحی بنیا دوں پر حل کرے ہم کسی بھی 20 فی صد کٹوتی کو قبول نہیں کرتے۔ انہوں نے کہا کہ پہلے ہی پرائیویٹ سکول سپریم کورٹ کے آڈر کے مطا بق  فیسیں وصول کر رہے ہیں دیگر صوبو ں کی طرح پنجا ب بھی والدین کی جگہ خود فیس ادا کرے اگر والدین کا احساس ہے تو جو 25 اقسام کے ٹیکس ہم سے وصول کر تے ہیں سب سے پہلے تو ان کا خاتمہ کریں، انہوں نے کہا کہ صو بہ کے پی کے میں بھی حکو مت نے اعلا ن کیا ہے کہ وہ والدین کی جگہ خود فیس ادا کر یں گے انہوں نیکہاکہاب صو ب پنجا ب اتنا بھی غریب صو بہ نہیں ہے۔انہو ں نے کہا کہ محکمہ سکول ایجوکیشن نے فیسوں میں 20 فیصد کمی کا  جو فیصلہ کیا ہے وہ کسی صورت قابل قبول نہیں ہے اگر ایسا کو ئی آڈر ہوا تو اس کے خلا ف عدالت جا ئیں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -