کرپشن کیخلاف بہترین تحقیقات کیلئے افسروں کی جدیدٹریننگ ضروری، چیئرمین نیب

کرپشن کیخلاف بہترین تحقیقات کیلئے افسروں کی جدیدٹریننگ ضروری، چیئرمین نیب

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب انویسٹی گیشن افسروں کی کارکردگی کے معیار کو بہتر رکھنے اور اس میں مزید بہتری کے لئے ٹریننگ موثر ذریعہ ہے، نیب عصر حاضر کے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے انویسٹی گیشن افسروں کی باقاعدہ بنیادوں پر تربیت اور استعداد کار میں اضافہ کو اولین ترجیح دیتا ہے۔ نیب نے پاکستان میں انویسٹی گیشن کے امور کو ریگولیٹ کرنے کے لئے ایکریڈیٹیشن کونسل کے قیام کی تجویز پیش کی ہے جس کا مقصد بدلتی ہوئی ٹیکنالوجی اور قانون سازی سے متعلق پیش رفت کے تناظر میں انویسٹی گیشن افسروں کو درپیش چیلنجز کو باقاعدہ بنانا ہے جس کے لئے تمام سرکاری اور پرائیویٹ پروفیشنلز کو مربوط کرنے کی ضرورت ہے۔ دنیا بھر میں تفتیشی افسروں کی تربیت کے لئے کام کرنے والے اداروں کو بہترین بین الاقوامی طریقہ کار کے مطابق تربیت فراہم کرنے کی کوششیں کرنی چاہئیں، جہاں انویسٹی گیشن افسروں کی تربیت بہت اہم ہے وہیں انویسٹی گیشن پروفیشنلز کی ریگولیٹنگ اور ایکریڈیٹنگ کے لئے ایکریڈیٹیشن کونسل کی تشکیل بھی انتہائی اہم ہے جو کہ دنیا بھر کے اس طرح کے اداروں کے لئے بہترین معیار بن سکتی ہے۔ سرکاری اور نجی شعبے کے انویسٹی گیٹرز کو ایکریڈیٹیشن کی ایک چھتری تلے لانے اور بیرونی وسائل کے ساتھ صلاحیتوں کو ہم آہنگ کرنے کے لئے یہ تجویز دی گئی ہے کیونکہ پاکستان میں نظم و نسق میں کرپشن کے تناظر میں انویسٹی گیشن کا شعبہ اہمیت کا حامل ہے جس میں ریاست اور شہریوں کے درمیان اعتماد کی کمی کو بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کیا اور اس کے لئے قومی سطح پر قانون سازی کی ضرورت ہے۔

چیئرمین نیب

مزید :

صفحہ اول -