جہانیاں‘ دکاندار کا ساتھیوں سمیت پرائس کنٹرول مجسٹریٹ پر تشدد

  جہانیاں‘ دکاندار کا ساتھیوں سمیت پرائس کنٹرول مجسٹریٹ پر تشدد

  

ملتان‘ اڈا پل 14‘ شجاع آباد‘ رحیم یار خان‘ میلسی‘ کبیروالا‘ وہاڑی‘ مظفر گڑھ (نیوز رپورٹر‘ نامہ نگار‘ بیورو رپورٹ‘ نمائندگان پاکستان) پرائس کنٹرول مجسٹریٹ۔ کو آٹا مافیا کے خلاف کاروائی کرنا مہنگا پڑ گیا،دکاندار نے اپنے حواریوں کے ہمراہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کو یرغمال بنا لیا مقامی پولیس نے موقع پر پہنچ کر جان بخشی کروائی تفصیل کے مطابق جہانیاں کے (بقیہ نمبر43صفحہ6پر)

نواحی چک 106 دس آر میں دکاندار اسلام ولد ملک بشیر قوم تیلی 20 کلو آٹے کا تھیلا گورنمنٹ کے مقرر کردہ ریٹ سے تجاوز کر کے 900 روپے میں سیل کر رہا تھا کہ کسی نے ہیلپ لائن پر اطلاع کر دی تو اسسٹنٹ کمشنر جہانیاں نے پرائس کنٹرول مجسٹریٹ مظہر کلیم کو عوامی شکایت کا ازالہ کرنے کا حکم دیا مجسٹریٹ نے اپنے بندے بھیج کر خریداری کروائی تو خریداروں نے پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کو موقع پر بلا لیا مگر اسلام تیلی جو کہ علاقہ میں بااثر مافیا کا سرغنہ جانا جاتا ہے اس نے اپنے حواریوں کو موقع پر بلوا لیا انہوں نے آتے ہی پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کی گاڑی کا یہ گھیراؤ کر کے انہیں گاڑی سے نیچے اتار لیا اور زد وکوب کرنا شروع کر دیا بگڑتے ہوئے حالات کے پیش نظر کسی نے پولیس کو اطلاع کر دی پولیس نے موقع پر پہنچ کر اسلام تیلی اور اسکے غنڈوں سے پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کی جان بخشی کروائی،پرائس کنٹرول مجسٹریٹ با اثر مافیا کے خلاف بغیر کسی کاروائی کے واپس لوٹ گیا اہل علاقہ نے اسلام تیلی اور اسکے غنڈوں کے خلاف کمشنر ملتان،ڈی سی خانیوال اور اسسٹنٹ کمشنر جہانیاں سے فوری کاروائی کا مطالبہ کیا۔ شجاع آباد میں آٹے کا بحران بدستور جاری آٹا لینے والوں کی تھانہ چوک پر لمبی قطاریں لگی گئیں آٹا انتظامیہ نے آٹا مافیا کے حوالے کر دیا آٹے کے سیل پوائنٹ پر آویزاں دکانداروں نے اتار دئیے اسسٹنٹ کمشنر کی جانب سے آٹے کے سپلائی کے بعد سیل پوائنٹ پر آٹے کی لسٹ تیار کی جاتی ہے اسسٹنٹ کمشنر نے سیل پوائنٹس پر پٹواری محکمہ مال کی ڈیوٹی لگائی ہوئی ہے نہ تو سیل پوائنٹ پر پٹواری کو اور نہ ہی ریونیو افسران کو دیکھا گیا ہے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان خان بزدار نے حالیہ لاک ڈاؤن سے معاشی طور پر براہ راست متاثر ہونے والے گھرانوں کی معاشی کفالت کے لئے پنجاب انصاف پروگرام کا آغاز کیا ہے جس کے تحت صوبہ پنجاب کے25لاکھ گھرانوں کو 4000روپے ماہانہ فراہم کئے جائیں گے۔ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے ارکان پارلیمنٹ کو پنجاب انصاف پروگرام بارے بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔اجلاس میں صوبائی وزیر آبپاشی پنجاب محمد محسن خان لغاری، ایم این اے چوہدری جاوید اقبال وڑائچ، ایم پی اے چوہدری محمد شفیق، ایم پی اے میاں محمد شفیع سمیت پاکستان آرمی اور ارکان پارلیمنٹ کے نمائندگان موجود تھے۔ صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ پنجاب محمد جہانزیب خان کھچی نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی موجودہ صورتحال کے پیش نظر پنجاب حکومت نے 25 لاکھ خاندانوں کو 4ہزار روپے فی کس ماہانہ وظیفہ کا پیکج جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ وزیر اعظم کے بحالی پیکج کے تحت بھی ایک کروڑ 20 لاکھ خاندانوں کو مالی امداد مہیا کی جائیگی جس سے کمزور طبقات اور دیہاڑی دار مزدوروں کی موجودہ لاک ڈاؤن کی صورتحال میں بحالی ممکن ہو گی ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ میلسی شہر اور نواحی علاقوں میں آٹے کی قلت کی صورتحال پر فوری نوٹس لیا گیا ہے اور حفاظتی اقدامات کو یقینی بناتے ہوئے 6 مزید نئے آٹا سیل پوائنٹس قائم کیئے گئے ہیں۔ کبیروالا اور نواحی علاقوں میں آٹے کی قلت کے شکار در جنو ں مرد اور خواتین نے بچوں سمیت آٹے کی قلت کے خلاف مخدو مپور چونگی پر پر امن احتجاجی مظاہرہ کرتے ہو ئے اسلام آبا د،سرگعدھا،جھند روڈ مکمل طور پر بلاک کردی اس دوران احتجاجی مظاہرین نے مقامی اور ضلعی انتظامیہ کو آٹے کے بحران کا ذمہ دارقرار دیتے انکے خلاف شدید نعرہ بازی کی، مظاہرین نے میڈیا کو بتایا کہ ملیں ضلعی اور مقامی آفیسران کی ملی بھگت سے آٹا بلیک میں فروخت کررہی ہیں جب کہ عام آدمی کو سرکاری مقررہ قیمتوں پر آٹے کاملنا محال ہو چکا ہے انکے گھروں میں نو بت فاقہ کشی تک پہنچ چکی ہے، کورونا لاک ڈاون کے موقع پر حکومت کی جانب عوام کو ریلیف فراہم کرنے کے دعوے یکسر جھوٹے ثابت ہورہے ہیں شہر اور گردونواح میں عوام کی سہولت کیلئے قائم کئے گئے یوٹیلٹی سٹورز پر آٹا,چینی سمیت دیگر اشیائے ضرورت بھی موجود نہیں ہیں جبکہ دال چنا مارکیٹ سے 20 روپے مہنگی فروخت کی جارہی ہے شہریوں فہد,عامر,شہزاد,احمد,ندیم,محمود,شاہزیب,معین ودیگر نے احتجاج کرتے ہوئے صحافیوں کو بتایا کہ حکومتی لاک ڈاون کے باعث ایک طرف تو ہمارا روزگار مکمل طور بند ہے اوپر سے ہمیں کھانے پینے سے سامان بھی میسر نہیں ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی جنوبی پنجاب کے نائب صدر اور قومی اسمبلی کے رکن مہر ارشاد احمد سیال نے کورونا وائرس کے عذاب کے دوران حکومت کی غلط پالیسی پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مصیبت کی اس گھڑی میں آٹے کی تقسیم کو بھی سیاست کی بھینٹ چڑھا دیا گیا ہے اورغریب طبقوں کی امداد کیلئے آئے روز رسمی اعلانات کیے جارہے ہیں مگر ابھی تک کہیں بھی حکومت کی طرف سے مستحق افراد کوکسی قسم کی کوئی امدادنہیں دی جارہی جوکہ انتہائی افسوسناک امر ہے۔

آٹا

مزید :

ملتان صفحہ آخر -