نوشہرہ میں کروناوائرس سے متاثرہ علاقہ سیل

نوشہرہ میں کروناوائرس سے متاثرہ علاقہ سیل

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) جماعت اسلامی پاکستان کے مرکزی نائب امیر وسابق رکن قومی اسمبلی اسداللہ بھٹو نے زور دیا ہے کہ لاک ڈاؤن میں قوم کو بھکاری بننے پر مجبور کرنے کی بجائے حکومت پیٹرول،ڈیزل کی قیمتوں میں خاطر خواہ کمی،بجلی وگیس کے بل معاف اور روز مرہ اشیائے خوردونوش کی قیمتوں پر کنٹرول کیا جائے، کورونا وائرس پوری انسانیت کیلئے وارننگ اور قوم کیلئے آزمائش ضرور ہے مگر حکومت ومیڈیا اس کو خوف وافراتفری کا سبب نہ بنائے، حکومتی اعلان اسکیموں کے شفاف ہونے کی ضرورت ہے کیونکہ امدامدی کاموں میں کرپشن کی تاریخ موجود ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے صوبائی امیر محمد حسین محنتی کے ہمراہ جماعت اسلامی ضلع قائدین کے تحت لاک ڈاؤن کے دوران مستحقین کیلئے جمع ہونے والے راشن ودیگر سامان کے معائنہ کے دوران کیا۔اس موقع پر قیم ضلع سلیم عمر نے تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ الخدمت کے رضاکاردن رات اپنے متاثرہ بھائیوں خاص طور پر سفید پوش لوگوں کی امداد میں مصروف ہیں،الخدمت کے رضاکار پہلے مستحق افراد کا سروے اور پھر اپنے علاقوں میں جاکر مستحقین کے گھروں پر راشن پہنچاتے ہیں تاکہ حقیقی مستحق لوگ ہی اس کا فائدہ اور کسی کا عزت نفس بھی مجروح نہ ہو۔جماعت اسلامی رہنماء نے الخدمت رضاکاروں کے خدمت خلق والے جذبے کی تحسین کرتے ہوئے کہا کہ کوروناوائرس کی وجہ اور لاک ڈاؤن کے نتیجے میں فاقہ کشی اور گداگری کرنے پر مجبور ہیں، خاص طور پر سفید پوش طبقہ سخت آزمائش سے دوچار ہے۔اسداللہ بھٹو نے کہا کہ ملک اور اس وقت نازک صورتحال سے دوچار ہے، جس کی وجہ سے حکمرانوں کا فرض ہے کہ وہ ملک میں قومی یکجہتی کی فضٓ کو برقرار،امدادی اسکیموں کو شفاف وغیر سیاسی بنانے کیلئے واضح اقدامات کئے جائیں۔ملک کی تمام دینی وسیاسی جماعتوں کو اعتماد میں لیا جائے،پارٹی نوازی کی بجائے پاکستان نوازی کو ترجیح دی جائے،حکومت ومیڈیا صر ف خوف پھیلانے کی پالیسی پر عمل پیرا ہے جبکہ رجوع الی اللہ اور احتیاطی تدابیر سے خیروامید کے پہلو کو بھی اجاگر کیا جائے تاکہ لوگوں کے اندر اس مہلک وباکے معاملے میں حوصلہ کے ساتھ اللہ پر توکل اور امید پر زندگی گذار سکیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -