امریکی صحافی ڈینیل پرل قتل کا معاملہ،سندھ ہائیکورٹ نے ملزموں کی سزا کیخلاف اپیلوں پر 18 سال بعد فیصلہ سنا دیا

امریکی صحافی ڈینیل پرل قتل کا معاملہ،سندھ ہائیکورٹ نے ملزموں کی سزا کیخلاف ...
امریکی صحافی ڈینیل پرل قتل کا معاملہ،سندھ ہائیکورٹ نے ملزموں کی سزا کیخلاف اپیلوں پر 18 سال بعد فیصلہ سنا دیا

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)امریکی صحافی ڈینیل پرل قتل کیس میں ملزموں کی سزا کیخلاف اپیلوں پرفیصلہ سنا دیاگیا،سندھ ہائیکورٹ نے ملزموں کی سزا کے خلاف اپیل کا 18 سال بعد فیصلہ سنایاگیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق عدالت نے مرکزی ملزم احمد عمر شیخ کے علاوہ باقی تینوں ملزم بری کر دیئے ۔عدالت نے احمد عمر شیخ کی سزائے موت کو 7 سال قید میں تبدیل کردیا۔عدالت نے کہاہے کہ احمد عمر شیخ پر اغوا کا الزام ثابت ہوا ،ڈینیل پرل کے قتل کا الزام کسی ملزم پر ثابت نہیں ہوا۔

یاد رہے کہ برطانوی شہریت رکھنے والے ملزم احمد عمر شیخ کو عدالت نے سزائے موت کا حکم دیا تھا،ملزم فہدسلیم ،سید سلمان ثاقب اورشیخ محمد عادل کو عمر قید کی سزادی گئی تھی ،ملزموں پر امریکی صحافی ڈینیل پرل کے اغوا برائے تاوان اورقتل کا الزام تھا،فیصلہ جسٹس کے کے آغااور جسٹس ذوالفقار سانگی پر مشتمل بنچ نے سنایا۔

مزید :

اہم خبریں -علاقائی -سندھ -کراچی -