سپریم کورٹ،کنٹریکٹ ملازم کی نوکری پر بحالی سے متعلق درخواست مسترد

سپریم کورٹ،کنٹریکٹ ملازم کی نوکری پر بحالی سے متعلق درخواست مسترد
سپریم کورٹ،کنٹریکٹ ملازم کی نوکری پر بحالی سے متعلق درخواست مسترد

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے کنٹریکٹ ملازم عقیل حسین کی نوکری پر بحالی سے متعلق درخواست مستردکردی،جسٹس اعجازا لاحسن نے کہاکہ آپ کنٹریکٹ پر تھے اور آپ کو کسی بھی وقت نکالا جا سکتا تھا، آپ نے نوکری کرتے وقت معاہدہ سائن کیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں کنٹریکٹ ملازم عقیل حسین کی نوکری پر بحالی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی،عدالت نے کہاکہ درخواست گزار کو کنٹریکٹ پر بھرتی کیا گیا، سروس کنٹریکٹ کی شق 18 کے مطابق درخواست گزار کو نوکری سے فارغ کیاگیا، معاہدے کے مطابق محکمہ کسی بھی وقت بغیر کوئی وجہ بتائے نوکری نے نکالنے کا مجاز تھا۔

درخواست گزار عقیل حسین نے کہاکہ میرے ساتھ ظلم ہوا ہے، جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ آپ پر مس کنڈکٹ کا چارج نہیں لگایا، آپ کنٹریکٹ پر تھے اور آپ کو کسی بھی وقت نکالا جا سکتا تھا، آپ نے نوکری کرتے وقت معاہدہ سائن کیا تھا۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ عدالت آپ کو نوکری پر بحال نہیں کر سکتی، آپ سمجھتے ہیں زیادتی ہوئی تو سول کورٹ میں جا کر واجبات کا کیس کریں،عدالت نے درخواست گزار کو دوبارہ نوکری پر بحال کرنے کی درخواست مسترد کر دی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -