کیا کتوں اور بلیوں کو کورونا وائرس ہوسکتا ہے؟ چینی تحقیق کاروں نے حیران کن انکشاف کردیا

کیا کتوں اور بلیوں کو کورونا وائرس ہوسکتا ہے؟ چینی تحقیق کاروں نے حیران کن ...
کیا کتوں اور بلیوں کو کورونا وائرس ہوسکتا ہے؟ چینی تحقیق کاروں نے حیران کن انکشاف کردیا

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) قبل ازیں ماہرین کی طرف سے بتایا گیا کہ کورونا وائرس صرف انسانوں ہی کو لاحق ہوتا ہے لیکن اب چینی سائنسدانوں نے اس کے برعکس انکشاف کر دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق چین کی سٹیٹ کی(Key) لیبارٹری آف ویٹرنری بائیوٹیکنالوجی کے سائنسدانوں نے اس تحقیق میں کتے، بلی اور دیگر مختلف جانوروں کو لیبارٹری میں کورونا وائرس میں جان بوجھ کر مبتلا کرنے کی کوشش کی اور دیکھا کہ ان میں سے کون سے جانوروں کو کورونا وائرس لاحق ہوتا ہے۔ نتائج میں یہ انکشاف ہوا کہ کورونا وائرس بلی اور سفید نیولے کو باآسانی لاحق ہو سکتا ہے۔ کتے بھی اس سے متاثر ہو سکتے ہیں لیکن وہ آسانی سے وائرس کا شکار نہیں ہوتے۔

سائنسدانوں نے بتایا کہ بلیوں اور سفید نیولوں (ایک نیم پالتو جانور)کو انسانوں سے کورونا وائرس لگ سکتا ہے تاہم اس کے بعد ان سے انسانوں میں وائرس منتقل ہونے کا خطرہ بہت کم ہوتا ہے۔ سفید نیولے کے جسم میں جاکر کورونا وائرس نے لگ بھگ ویسا ہی ردعمل ظاہر کیا جیسا انسانوں میں کر رہا ہے۔ چنانچہ ماہرین کا کہنا ہے کہ انسانوں کے لیے بنائی جانے والی کورونا وائرس کی ادویات کے تجربات سفید نیولے پر کیے جا سکتے ہیں۔

تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ جیان ژونگ شی کا کہنا تھا کہ ”ہم نے یہ تحقیق مختلف ممالک میں پالتو کتوں اور بلیوں کو کورونا وائرس لاحق ہونے کی خبریں سامنے آنے کے بعد شروع کی تھی۔ بیلجیم میں ایک بلی کے مالک کو کورونا وائر س لاحق ہوا اور اس کے چند دن بعد اس کی بلی میں بھی وائرس کی تصدیق ہو گئی۔ اسی طرح ہانگ کانگ میں دو کتوں کو وائرس لاحق ہونے کی خبر بھی سامنے آ چکی ہے۔انسانوں کو ان جانوروں سے محتاط رہنا چاہیے۔ ایک طرف یہ خود بھی انسانوں سے وائرس کا شکار ہو سکتے ہیں اور دوسری طرف ان سے انسانوں کو وائرس منتقل ہونے کا بھی کسی حد تک امکان ہوتا ہے۔“

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -