بزرگ حریت رہنما سید علی گیلانی کی گھر میں مسلسل نظر بندی کی مذمت

بزرگ حریت رہنما سید علی گیلانی کی گھر میں مسلسل نظر بندی کی مذمت

  

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں بزرگ حریت رہنما سید علی گیلانی کی سرپرستی میں قائم فورم نے بزرگ رہنما کی گھر میں مسلسل نظر بندی کی مذمت کی ہے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق فورم کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ کٹھ پتلی انتظامیہ سید علی گیلانی کو سیاسی سرگرمیوں اور مذہبی فرائض کی ادائیگی سے روک رہی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ سید علی گیلانی کومسلسل 15مرتبہ جمعہ کی نماز ادا کرنے سے روک دیا گیا۔ ترجمان نے کہا کہ حریت رہنماؤں محمد اشرف صحرائی، ایاز اکبر ، راجہ معراج الدین کو بھی جمعہ کے روز گھر وں میں نظر بند رکھنے کے علاوہ میر حفیظ اللہ کو اسلام آ باد اور رئیس احمد میر کو بانڈی پورہ میں گرفتار کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی اور بھارتیہ جنتا پارٹی کی اتحاد ی حکومت کے قیام کے بعد مقبوضہ علاقے میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں میں اضافہ ہوا۔ترجمان نے کہا کہ کٹھ پتلی انتظامیہ نے آزادی پسند رہنماؤں ار کارکنوں کی سیاسی سرگرمیوں پر پابندیوں کا سلسلہ بڑھا دیا ہے ۔

مزید :

عالمی منظر -