افغان فورسز سے جھڑپوں میں طالبان کمانڈر سمیت 102جنگجو ہلاک

افغان فورسز سے جھڑپوں میں طالبان کمانڈر سمیت 102جنگجو ہلاک

  

کابل(این این آئی) افغانستان کے تخار اور فاریاب صوبوں میں سیکورٹی فورسز کی کارروائیوں میں 102 طالبان ہلاک ہو گئے،فرانسیسی خبررساں ادارے کے مطابق افغان وزارت داخلہ کے ترجمان نے اپنے جاری ایک بیان میں بتایاکہ افغانستان کے تخار اور فاریاب صوبوں میں سیکورٹی فورسز کی کارروائیوں میں 102 طالبان ہلاک ہو گئے،انہوں نے بتایاکہ طالبان کا ایک کمانڈر بھی ان کارروائیوں میں ہلاک ہوا ہے،صوبہ تخار کے پولیس ترجمان خلیل اسیر نے بتایا کہ طالبان کا کمانڈر قاری صلاح الدین صوبے کے اشکمش شہر میں سیکورٹی فورسز کی کارروائی میں ہلاک ہوا،ان کا کہناتھا کہ صوبہ تخار کے شہر خواجہ غار میں بھی ایک کمانڈر قاری ابراہیم اور 32دیگر طالبان ہلاک ہوئے ،ادھر صوبہ فاریاب کے حکام نے اس صوبے کے قیصار، المار اور گرزیوان شہروں میں70 طالبان کی ہلاکت کی خبر دی ہے،طالبان نے اس سلسلے میں کوئی رد عمل ظاہر نہیں کیا ہے،حکام کے مطابق سیکڑوں طالبان جنگجوؤں نے صوبہ قیصار میں پولیس اور آرمی کی چیک پوسٹوں پر حملے کیے ، مذکورہ صوبہ 2001 میں افغانستان میں امریکی آمد سے قبل طالبان کا اہم گڑھ تصور کیا جاتا تھا۔گورنر صوبہ قیصار کے ترجمان کا کہنا ہے کہ جھڑپوں میں پانچ درجن سے زائد طالبان جنگجو ہلاک ہوئے ۔انہوں نے کہا کہ طالبان اب صوبے کے دارالحکومت پر قبضے کے لیے کارروائیاں کررہے ہیں۔گورنر کے ترجمان نے کہا کہ طالبان کی جانب سے خطرہ بہت زیادہ بڑھ گیا ہے تاہم فورسز کی ازسرنو تبدیلی کے باعث سیکیورٹی فورسزاہلکاروں حوصلے بلند ہیں۔

مزید :

علاقائی -