جلال الدین حقانی نے ملااخترمنصورکے انتخاب کو شریعت کے مطابق قراردیدیا

جلال الدین حقانی نے ملااخترمنصورکے انتخاب کو شریعت کے مطابق قراردیدیا

  

کابل(اے این این)حقانی نیٹ ورک کے سربراہ جلال الدین حقانی نے افغان طالبان کے نئے امیرملااخترمحمدمنصورکے انتخاب کو بہترین اور شریعت کے مطابق قراردیتے ہوئے طالبان جنگجوؤں سے اپیل کی ہے کہ وہ باہمی اتحاد اور اتفاق کو برقراررکھیں اور دشمنوں کے منفی پروپیگنڈے پر کان نہ دھریں، طالبان کے درمیان اختلاف کے نہ صرف افغا ن عوام پر منفی اثرات مرتب کریں گے، بلکہ عالم اسلام کے مسلمان بھی اختلاف کے شکار ہوجائیں گے ،جلال الدین حقانی کاپیغام ایک ایسے موقع پرجاری ہواہے جب میڈیارپورٹ میں یہ دعویٰ کیاگیاہے کہ وہ ایک سال قبل انتقال کرگئے ہیں ۔گزشتہ روزافغان طالبان کی ویب سائٹ پرجاری پیغام میں جلال الدین حقانی نے کہاکہ امیرالمومنین ملامحمدعمرکاوصال عالم اسلام، افغان عوام اورخاص طور اسلامی تحریکوں کیلئے بڑانقصان ہے اور ہم مرحوم کی مخلصانہ خدمات کو امت مسلمہ پرناقابل فراموش احسان سمجھتے ہیں۔ اللہ تعالی انہیں جنت الفردوس میں عظیم مقام اور ان کے خاندان کو صبر جمیل عطا فرمائے۔انہوں نے کہاکہ ہم مکمل طور پر مطمئن ہیں کہ ملااخترمحمدمنصور کا انتخاب بہترین اور شرعی طریقے پر ہوا اوروہ عالی قدر امیر المومنین کے کماحقہ جانشین ہیں، ہم امارت اسلامیہ کے تمام رہنماؤں اور کارکنوں کو ملااختر کیساتھ بیعت اور مکمل اطاعت کا یقین دلا تے ہیں، اپنے اور مجاہدین کی طرف سے اطمینان دلاتے ہیں کہ جس طرح ملامحمدعمر کی اطاعت کی گئی، اسی طرح ملا منصور کی زیرقیادت دین مبین اسلام کے ہر حکم کو لبیک کہیں گے۔

مزید :

صفحہ اول -