75 فیصد سرکاری سکول انسداد ڈینگی اور دیگر برساتی بیماریوں سے بچاؤ کے اقدامات سے محروم

75 فیصد سرکاری سکول انسداد ڈینگی اور دیگر برساتی بیماریوں سے بچاؤ کے اقدامات ...

  

لاہور(لیاقت کھرل) موسم گرما کی تعطیلات اور مون سون سے قبل ازوقت آغاز کے باوجود شہر کے لگ بھگ 70سے 75فی صدسرکاری سکولز ڈینگی اور دیگر برساتی بیماریوں بشمول وبائی امراض سے بچاؤ کیلئے انتظامیہ کی جانب سے کسی قسم کے اقدامات نہیں کیے جاسکے۔ بعض سکولوں کے گراؤنڈز صحن اور باغیچوں میں کئی روز سے بارش کا پانی کھڑا ہے اور کئی اداروں کے گراؤنڈز تو جوہڑ کا منظر پیش کرہے ہیں۔ڈی اوز اور ڈپٹی ڈی اوز کی فرضی رپورٹس تیارکرنے پر وزیر اعلیٰ نے نوٹس لے لیا۔ڈی سی او اورای ڈی اولاہور سے رپورٹ طلب کرلی گئی۔’’پاکستان کو ‘‘زرائع نے بتایا ہے کہ ڈی سی او لاہور اور ای ڈی او ایجوکیشن پرویز اختر خان کے سخت ترین احکامات کے باوجود شہر کے 70فی صد سکولوں میں ڈینگی اور برساتی بیماریوں کے بچاؤ کیلئے اقدامات کو مکمل نہیں کیا جا سکا ہے۔اس میں انسداد ڈینگی کے نام پر فنڈز کو ہڑپ کرنے کیلئے فرضی رپورٹس تیار کیے جانے کا انکشاف سامنے آیا ہے۔جس میں سکولوں میں موسم گرما کی تعطیلات کے باوجود اساتذہ کو سکولوں میں طلب کر لیا جاتا ہے اور اساتذہ کو ڈینگی لاروا تلاش کرنے کی ڈیوٹی پر لگا دیا جاتا ہے۔اس میں اساتذہ کو نہ توانسداد ڈینگی کے حوالے سے کوئی تربیت دی گئی ہے اور اساتذہ سکولوں میں چند گھنٹے گپ شپ لگا کر رفو چکر ہو جاتے ہیں جبکہ سکولوں کے ہیڈماسٹرز پورا ہفتہ تک آتے ہی نہیں اور کاروائی ڈالنے کیلئے چھٹی کے دن اتوار کو ڈینگی ڈے رکھ لیا جاتا ہے۔اور اتوار کو سکولوں کے ہیڈ ماسٹرز دفتر میں آکر پورے ہفتہ کی حاضریاں لگانے کے ساتھ ایک فوٹو سیشن کر کے ڈپٹی ڈی اوز اور ڈی اوز کو بھجوا دیتے ہیں۔سکولوں کے اعلیٰ افسران بھی ان بوگس رپورٹس پر ہی اکتفا کرتے ہوئے ای ڈی او تعلیم کو بھجوا دیتے ہیں ۔ذرائع نے بتایا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب اورچیف سیکرٹری پنجاب کے حکم پرخفیہ ٹیموں نے لاہور کے سکولوں کا سروے کیا ہے جس میں بتا یا گیا ہے کہ شہر کے سکولوں میں ڈینگی سے بچاؤ کیلئے کوئی اقدامات نہیں کیے جا رہے ہیں ۔خفیہ ٹیموں کی تیار کی گئی رپورٹ میں بتا یا گیا ہے کہ سکولوں کے ہیڈ ماسٹرز آتے تک نہیں ہیں اورانسداد ڈینگی کی کسی ٹیم کو بلایا تک نہیں جاتا ہے ،جس کے باعث زیادہ تر سکولوں کے گراؤنڈز جوہڑ کی شکل اختیار کر رہے ہیں،اس کے ساتھ سکولوں کے صحن اور باغیچوں کی مناسب صفائی نہ ہونے کی بنا پر ڈینگی جیسے جان لیوا خطرناک مرض اور دیگر بشمول دیگر وبائی امراض کے پھیلنے کا خدشہ ہے۔ذرائع نے بتایا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے پیش ہونے والی رپورٹ پر سخت نوٹس لے لیا ہے۔اور ڈی سی او اور ای ڈی اولاہور سے مفصل رپورٹ طلب کر لی ہے۔اس حوالے سے ای ڈی او سکولز پرویز اختر خان کا کہنا ہے کہ سکولوں میں روزانہ کی بنیاد پر مانیٹرنگ ٹیمیں چھاپے مارتی ہیں،اورکوتاہی کے مرتکب اساتذہ اور ہیڈماسٹرز کے خلاف ایکشن لیا جا تا ہے۔

انسدادِڈینگی

مزید :

صفحہ آخر -