نوجوان لڑکی سوتیلے باپ کے جنسی تشدد سے بچنے کیلئے شادی شدہ شخص کیساتھ بھاگ گئی

نوجوان لڑکی سوتیلے باپ کے جنسی تشدد سے بچنے کیلئے شادی شدہ شخص کیساتھ بھاگ ...
نوجوان لڑکی سوتیلے باپ کے جنسی تشدد سے بچنے کیلئے شادی شدہ شخص کیساتھ بھاگ گئی

  

کولمبو(مانیٹرنگ ڈیسک)سری لنکا میں سوتیلے باپ کی زیادتی کا نشانہ بننے والی 15سالہ لڑکی اکتیس سالہ شادی شدہ اور ایک بچے کے باپ کے ساتھ فرار ہوگئی ۔

تفصیلات کے مطابق لڑکی کے غائب ہونے کے بعد اس کی والدہ نے شکایت درج کرائی اورتحقیقات کے دوران گریباواکے علاقے کے ایک مرد کانام سامنے آیاجس کی حال ہی میں لڑکی کیساتھ دوستی تھی ۔ لڑکی نے پولیس کو بتایاکہ وہ ملزم کیساتھ بھاگ گئی تھی کیونکہ وہ ہر اس وقت اپنے سوتیلے باپ کے جنسی تشدد کا نشانہ بنی جب اس کی والدہ گھر پر نہیں ہوتی تھی۔ اس کے والد کا انتقال ہوچکاہے اور اس کی والدہ نے دوسری شادی کی ۔ لڑکی کے بیانات کی روشی اوردرخواست پر دونوں مردوں کو حراست میں لے لیاگیا۔

اسی طرح ایک اور واقعے میں 34سالہ شخص کو 10سال قید کی سزاسنادی گئی ہے جس پر الزام تھا کہ اس نے تین بچوں کی ماں پچاس سالہ خاتون کو قیدمیں رکھتے ہوئے جنسی تشدد کا نشانہ بنایااور عدالت نے یہ بھی حکم دیاکہ وہ خاتون کو 75ہزار سری لنکن روپے بھی اداکرے ، اگر یہ رقم ادانہ ہوئی تو مزید چھ ماہ قید میں رہے گا۔ یہ واقعہ 2006ءمیں پیش آیاتھاجب ملزم زبردستی گھر میں گھسا اور چاقوکی نوک پر خاتون کو جنسی تشدد کا نشانہ بناڈالا۔

مزید :

جرم و انصاف -