قانون کی پاسداری کیلئے کروڑوں کی مالیت کی ایسی اشیا ضائع کردی گئیں کہ شائد آپ یقین نہ کر پائیں

قانون کی پاسداری کیلئے کروڑوں کی مالیت کی ایسی اشیا ضائع کردی گئیں کہ شائد آپ ...
قانون کی پاسداری کیلئے کروڑوں کی مالیت کی ایسی اشیا ضائع کردی گئیں کہ شائد آپ یقین نہ کر پائیں

  



منیلا(ڈیلی پاکستان آن لائن) فلپائن کی حکومت نے غیر قانونی طریقے سے سمگل کی جانے والی 67 کروڑ مالیت کی گاڑیوں اور موٹرسائیکلوں پر بلڈوزر پھیر کر انہیں تباہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق فلپائنی صدر کے حکم پر حکومت نے سمگلنگ کے خلاف زوروں شوروں سے مہم شروع کررکھی ہے، اس ضمن میں غیر قانونی طریقوں سے مختلف شہروں میں آنے والے مال کو تلف کیا جارہا ہے۔اس مہم نے اس وقت عالمی میڈیا کی توجہ حاصل کی کہ جب مقامی حکام نے 67 کروڑ 62 لاکھ روپے مالیت کی درجنوں لگڑری گاڑیوں پر بلڈوزر پھیر کر انہیں تباہ کیا۔

اس ضمن میں ایک تقریب میں انعقاد کیا گیا جس میں فلپائنی صدر روڈریگو ڈیوٹرٹے نے بھی شرکت کی۔تقریب کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ’غیر قانونی طریقوں سے منگوائی جانے والی گاڑیوں کو تباہ کر کے دنیا کو پیغام دیا گیا ہے کہ فلپائن سرمایہ کاری کے لیے بہترین ملک ہے‘۔

ان کا کہنا تھا کہ اب تک 800 سے زائد لگڑری گاڑیاں حکومت قبضے میں لے چکی ہے، کرپشن اور سمگلنگ کے خلاف مہم اس وقت تک جاری رہے گی جبکہ تک شہری غیر قانونی طریقوں سے چیزیں منگوانا نہیں چھوڑیں گے۔قبل ازیں مہم کے پہلے حصے میں فلپائن کے دارالحکومت منیلا میں حکام نے دنیا کی مہنگی ترین کروڑوں مالیت کی گاڑیوں کو قبضے میں لے کر تباہ کیا تھا۔

خیال رہے کہ فلپائنی صدر نے 6 برس قبل عہدے کا حلف اٹھایا تھا جس کے بعد انہوں نے سب سے پہلے ملک سے منشیات کے خلاف کریک ڈاو¿ن کیا تھا جس کے تحت سینکڑوں افراد کو بغیر کسی مقدمے کے سزائے موت دیکر خس کم جہاں پاک کیا گیا تھا ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...