بہتری کے باوجود ریلوے میں بہت سی چیزیں ٹھیک کرنیکی ضرورت ہے: وفاقی وزیر روشن خورشید

بہتری کے باوجود ریلوے میں بہت سی چیزیں ٹھیک کرنیکی ضرورت ہے: وفاقی وزیر روشن ...

  



ملتان (خصوصی رپورٹر)پاکستان ریلوے اپنے تمام پنشنروں کو پنشن کی ادائیگی خود کرتا ہے کبھی اے جی آفس سے نہیں لیتا۔ ریلوے نے(بقیہ نمبر27صفحہ12پر )

کبھی سب سڈی کو گناہی نہیں ورنہ اتنا خسارہ نہ ہو یہ بات وفاقی وزیر ریلوے روشن خورشید نے راولپنڈی ریلوے سٹیشن کے دورے کے دورا ن عوام کی شکایت سننے کے بعد میڈیا سے گفتگو میں کہی۔ اْنہوں نے کہا کہ میں نے ٹرین کے ذریعے پشاور سے کراچی تک سفر کیا اور تقریباً ہر سٹیشن کی حالت کو بہتر پایا۔ چیئرمین سینٹ نے دو مرتبہ ریل سے سفر کیا اور اْمید سے بہتر پایا۔ اْنہوں نے کہا سچے دل سے کہتی ہوں کہ سابق وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے ریلوے میں بہترین کام کیا۔ خواجہ سعد رفیق کے دور کے اچھے کاموں کو نہیں روکنا چایئے انہیں آگے لے کر جانا چاہئے۔ بوگیوں کی حالت کو بہت اچھا بنایا گیا ہے اور جو تھوڑے بہت مسائل ادارے میں موجود ہیں میں ان کو خود دیکھوں گی یہ میرا کام ہے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ ریلوے کی زمین کسی کو بلا وجہ نہیں دینی چایئے لیز پر دی گئی زمین کی کمان بھی ریلوے کے پاس ہونی چایئے۔ سی پیک سے منسلک ایم ایل ون پر کام کرنا بہت لازم ہے۔ٹرینیں پرانی ہو گئیں ہیں ان کو بدلنے کی بے پناہ ضرورت ہے۔اْنہوں نے مزید کہا کہ ریلوے پولیس کی بہتری ہونی چایئے مجھے اپنی ریلوے پولیس پر فخر ہے۔تنخواہوں کو ہم بڑھا دیں لیکن دوسری طرف ہمیں خسارے کا سامنا بھی ہے۔اْنہوں نے کہا کہ ریلوے میں بہتری آنے کے باوجود کافی چیزیں ٹھیک کرنے کی ضرورت ہے۔

روشن خورشید

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...