گٹر بند، پانی گھروں میں داخل ، جگہ جگہ گندگی ، بیماریوں میں اضافہ؟

گٹر بند، پانی گھروں میں داخل ، جگہ جگہ گندگی ، بیماریوں میں اضافہ؟

  



ڈیرہ غازیخان(سٹی رپورٹر ) میونسپل کارپوریشن عملہ کی نااہلی کے باعث ڈیرہ شہر فلتھ ڈپو میں تبدیل ہوگیا۔ہر طرف گندگی کے ڈھیر، بدبو اور تعفن اور گندگی سے فضائی آلودگی میں اضافہ ہوگیا، سیوریج کا نظام درہم برہم، گھروں میں پانی داخل ہونے سے شہری شدید کرب کا شکار ہیں۔ تفصیلات کے مطابق کارپوریشن افسروں کی نااہلی کے باعث ڈیرہ غازیخان شہر کے مسائل بڑھ گئے‘ اسوقت ڈویژنل ہیڈکوارٹر کاشمار جنوبی پنجاب کے غلیظ ترین شہروں میں کیا جارہاہے‘ (بقیہ نمبر34صفحہ12پر )

ہر گلی اور چوک پر گندگی کے انبار لگے ہوئے ہیں جو کہ میونسپل کارپوریشن کے نمائندگان اور افسران کی غیر ذمہ داری کا منہ بولتا ثبوت پیش کر رہے ہیں‘ صفائی عملہ منظر سے غائب ہونے کی وجہ سے گلی، محلوں اور بازاروں میں گندگی کے ڈھیر لگنے سے بدبو اور تعفن کے باعث مختلف امراض رونما ہورہے ہیں‘ نکاسی و آب کا نظام خراب ہونے سے سیوریج کا گندا پانی گھروں میں داخل ہو رہا ہے جبکہ کارپوریشن کا بااثر عملہ گھر بیٹھے تنخواہیں وصول کر کے حکومت کو ہر ماہ تنخواہوں کی مد میں کروڑوں روپے کا ٹیکہ لگانے میں مصروف ہے‘ مختلف اربن یونین کونسل سے تعلق رکھنے والے افراد نوید مرتضی، رانا شہزاد، شاہد شاہ، عثمان، مجید، ملک عمر، جنرل سیکرٹری محمد صفدر خٹک، امتیاز کریم، محمد حنیف و دیگرنے شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ ڈیرہ میں کارپوریشن کا وجود ختم ہو چکا ہے ‘شہر مسائلستان کا گڑھ بنتا جا رہا ہے جبکہ ذمہ داران اپنے ایئرکنڈیشنڈ دفاتر سے باہر نکلنا ہی گوارہ نہیں کرتے۔ہرماہ گاڑیوں کے پٹرول، ڈیزل اور مرمتی کے بوگس بل بنا کر لاکھوں روپے ہڑپ کیے جا رہے ہیں‘ شکایت سیل غیر موثر ہو چکا ہے‘ عملہ متاثرین کی بات سننے کو تیار نہیں۔ صرف منظور نظر علاقوں کی صفائی کی جاتی ہے ڈی سی کے احکامات بھی ہوا میں آڑا دئیے جاتے ہیں۔ انہوں نے نومنتخب ممبران اسمبلی سمیت کمشنر ڈیرہ سے مطالبہ کیا ہے کہ کارپوریشن شہر کے معاملات کنٹرول کرنے میں ناکام ہو چکی ہے۔شہریوں نے بتایا کہ گندگی کے باعث شہر بھر میں بیماریاں جنم لے رہی ہیں‘ اس سلسلے میں فوری کارروائی کی جائے۔

ڈیرہ غازیخان کے مسائل

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...