امریکہ کا 5ہزار چینی مصنوعات پر محصول10سے25فیصد کرنے کا فیصلہ

امریکہ کا 5ہزار چینی مصنوعات پر محصول10سے25فیصد کرنے کا فیصلہ

  



واشنگٹن(آئی این پی )ٹرمپ انتظامیہ نے بیجنگ پر دباؤ بڑھانے کیلئے چینی ساختہ 200 بلین مالیت کی 5 ہزار مصنوعات پر محصول کی شر ح کو 10فیصد سے بڑھا کر 25 فیصد کرنے کا فیصلہ کیا ہے، امریکی میڈیا کے مطابق ٹرمپ انتظامیہ یہ اقدام جلد اٹھانے جا رہی ہے جبکہ صدر ٹرمپ (بقیہ نمبر58صفحہ7پر )

، چین کیلئے جوابی کاروائی کے طور پر متوقع 10فیصد اضافی کسٹم ڈیوٹی کو 25فیصد تک بڑھانے کا پروگرام رکھتے ہیں۔ذرائع کو پوشیدہ رکھتے ہوئے بلومبرگ اور سی این این کی شائع کردہ خبر میں دعویٰ کیا گیا ہے دو طرفہ کسٹم ڈیوٹی کی وجہ سے کشیدہ تعلقات اور منجمد مذا کر ات کے بعد ٹرمپ انتظامیہ کے اس فیصلے کا مقصد بیجنگ انتظامیہ پر دباو میں اضافہ کرنا ہے ۔ توقع ہے آنیوالے دنوں میں فیصلے کا باقاعدہ اعلان کیا جائے گا۔صدر ٹرمپ کے18 جون کو جاری کردہ احکامات کے دائرہ کار میں امریکہ کے تجارتی نمائندہ دفترUSTR کی طرف سے تیار کردہ اور چینی ساختہ 5 ہزار مصنوعات پر مشتمل اس فہرست میں سمندری مصنوعات سے لے کر اسپورٹس دستانوں تک، قدرتی و کیمیا ئی منرل سے لے کر سبزیوں اور پھلوں تک اور تمباکو کی مصنوعات سے لے کر گاڑیوں کے ٹائروں تک متعدد مصنوعات شامل ہیں۔واضح رہے ان حالات کو امریکہ اور چین کے درمیان ایک تجارتی جنگ کے آغاز کے طور پر دیکھا جا رہا ہے ۔ یہ حالات 23 مارچ کو ٹرمپ انتظا میہ کے درآمدی اسٹیل اور ایلومینیم کیلئے بالترتیب 25 فیصد اور10 فیصد اضافی کسٹم ڈیوٹی لگانے سے ہوا،جواب میں چین نے بھی ماہِ اپریل کے آغاز میں امریکی ساختہ 128 مصنوعات پر 15 سے 25 فیصد تک کسٹم ڈیوٹی لگا دی تھی۔

امریکہ فیصلہ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...