پروگریسو رائٹرز ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام مدیحہ گوہر کی یاد میں پروگرام

پروگریسو رائٹرز ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام مدیحہ گوہر کی یاد میں پروگرام

  



پروگریسو رائٹرز ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام اجوکا تھیٹر کی فاؤنڈنگ ڈائریکٹر مدیحہ گوہر کی یاد میں ٹریبیوٹ پروگرام

پاک ٹی ہاؤس میں ہونے والے پروگرام میں ادب، ثقافت، تھیٹر اور انسانی حقوق کے سرگردہ کارکنوں نے شرکت کی ۔

بامقصد اور سبق آموز تھیٹر ڈراموں کے ذریعے پاکستان میں معیاری تھیٹر کی احیا ء کرنے والی لیجنڈ تھیٹر اور ہیومن رائٹس ایکٹوسٹ مدیحہ گوہر کی یاد میں پروگریسو رائٹرز ایسوسی ایشن نے ہفتے کی شام پاک ٹی ہاؤس میں ٹریبیوٹ پروگرام کا انعقاد کیا جس کی صدارت نامور فنکار اور سکالر نعیم طاہر نے کی جبکہ تقریب کے مہمان خصوصی یاسیمین طاہر ، شاہد محمود ندیم ، فریال گوہراور ڈاکٹر صغری صدف تھے ۔ پروگرام کے آغاز میں پروگریسو رائٹرز ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری جاوید آفتاب نے شرکا ء کو خوش آمدید کہا جس کے بعد تمام مہمانوں سمیت رضا رومی ، نروان ندیم اور اجوکا تھیٹر کے جنرل سیکرٹری سہیل وڑائچ سمیت دیگر شخصیات نے مدیحہ گوہر کی فنی خدمات کو شاندار انداز میں خراج تحسین پیش کیا۔ مقررین کا کہنا تھا کہ مدیحہ گوہر نے تھیٹر کے ذریعے نہ صرف سماجی موضوعات اور مسائل کی بہترین انداز میں عکاسی کی بلکہ حقوق نسواں سمیت پسے ہوئے معاشرتی طبقوں کے حقوق کی سر بلندی کیلئے ہمیشہ سرگرم کارکن کے طور پر صف اول میں موجود رہیں ۔ انکے تھیٹر گروپ کو دنیا بھر میں بلھا، دارا ، کون ہے یہ گستاخ سمیت دیگر بامقصد ڈراموں کے ذریعے پاکستان کی نمائندگی کا اعزاز حاصل ہے جبکہ عالمی سطح پر ملنے والے لا تعداد ایوارڈز انکی فنی صلاحیتوں کا اعتراف ہیں ۔ پروگرام کے آخر میں نروان ندیم اور شاہد محمود ندیم نے اپنی گفتگو میں اس عزم کا اظہار کیا کہ اجوکا تھیٹر مدیحہ گوہر کے مشن کو جاری رکھے گا اور سماجی شعور سے متعلق تعمیری تفریح کے حامل سٹیج درامے مستقبل میں بھی باقاعدگی سے پیش کئے جاتے رہیں گے۔ دوسری جانب بیس جولائی کو برطانیہ کے لندن سکول آف اکنامکس میں بھی مدیحہ گوہر کی فنی خدمات کے اعتراف میں پروگرام کا انعقاد کیا گیا جس میں ایلزبتھ لنچ، سنجے رائے اور عدنان خان نے بطور مقررین مدیح گوہر کی فنی خدمات کوشاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا۔

مزید : ایڈیشن 2


loading...