شوبز راؤنڈاپ

شوبز راؤنڈاپ

  



mahnoor

ماہ نور کا سٹیج کے مقابلہ میں ٹی وی اور فلم کو زیادہ وقت دینے کا فیصلہ

فلم،ٹی وی اور سٹیج کی معروف اداکارہ ،ماڈل اور پرفارمر ماہ نور نے کہا ہے کہ اب میں نے سٹیج کے مقابلہ میں ٹی وی اور فلم کو زیادہ وقت دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔اس سلسلے میں مکمل منصوبہ بندی کرلی ہے ۔ماہ نور نے کہا کہ فلم کی کامیابی اور ناکامی کا فیصلہ عوام کرتے ہیں، کوئی بھی فلم اچھی یا بری بنائی نہیں جاتی، اس کا فیصلہ توسینما گھرمیں آنے والی فلم بینوں کی بڑھتی اورگھٹتی تعداد کرتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ دنیا بھرمیں بننے والی تمام سپرہٹ اورفلاپ فلموں کے پروڈیوسر، ڈائریکٹراورفنکاروں کے علاوہ تکنیکی عملے سے بات کی جائے تووہ اپنی فلم کوصدی کی شاہکارفلم ہی قراردیں گے۔ ان کے دلائل اورگفتگواس قدرجاندارہوگی کہ اس کوسننے والے اس بات کوماننے پرتیاربھی ہوجائیں گے۔ لیکن یہ سب باتیں ہی ہیں۔ماہ نور نے کہا کہ فلم کوپسند کرنے کا حق صرف اورصرف عوام کا ہے ، جس کوکوئی بھی فنکار، ہدایتکاریا فلمساز چھین نہیں سکتا۔ ہم بطور فنکار اور تکنیک کار بس یہی کوشش کرسکتے ہیں کہ اپنی تمام ترصلاحیتوں بروئے کارلاتے ہوئے بس اچھی فلم پروڈیوس کریں۔ باقی فیصلہ وہ فلم بین کریں گے جواپنا قیمتی وقت نکال کراورپیسے خرچ کرکے سینما گھرپہنچتے ہیں۔

sohrab afgan

فلم کی کامیابی اور ناکامی کا فیصلہ عوام کرتے ہیں،سہراب افگن

سینئر اداکار اور ڈائریکٹر سہراب افگن نے کہا ہے کہ فلم کی کامیابی اور ناکامی کا فیصلہ عوام کرتے ہیں، کوئی بھی فلم اچھی یا بری بنائی نہیں جاتی، اس کا فیصلہ توسینما گھرمیں آنے والی فلم بینوں کی بڑھتی اورگھٹتی تعداد کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھرمیں بننے والی تمام سپرہٹ اورفلاپ فلموں کے پروڈیوسر، ڈائریکٹراورفنکاروں کے علاوہ تکنیکی عملے سے بات کی جائے تووہ اپنی فلم کوصدی کی شاہکارفلم ہی قراردیں ۔ ان کے دلائل اورگفتگواس قدرجاندارہوگی کہ اس کوسننے والے اس بات کوماننے پرتیاربھی ہوجائیں گے۔ لیکن یہ سب باتیں ہی ہیں۔سہراب افگن نے کہا کہ فلم کوپسند کرنے کا حق صرف اورصرف عوام کا ہے ، جس کوکوئی بھی فنکار، ہدایتکاریا فلمساز چھین نہیں سکتا۔ ہم بطور فنکار اور تکنیک کار بس یہی کوشش کرسکتے ہیں کہ اپنی تمام ترصلاحیتوں بروئے کارلاتے ہوئے بس اچھی فلم پروڈیوس کریں۔ باقی فیصلہ وہ فلم بین کریں گے جواپنا قیمتی وقت نکال کراورپیسے خرچ کرکے سینما گھرپہنچتے ہیں۔

hasan malik

فلم کی کامیابی اچھی کہانی اور ڈائیلاگ سے ہی ممکن ہے، حسن ملک

اداکار وماڈل حسن ملک نے کہا ہے کہ فلم کی کامیابی اچھی کہانی اور ڈائیلاگ سے ہی ممکن ہے،جب تک ہماری فلموں کے سکرپٹ اورڈائیلاگ پرتوجہ نہیں دی جائے گی تب تک فلموں کی کامیابی کے ساتھ ساتھ فنکاروں کی مقبولیت بھی ممکن نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھرمیں بننے والی فلموں میں سب سے زیادہ اہمیت سکرین پلے اوراس فنکاروں کے ڈائیلاگز پردی جاتی ہے لیکن ہمارے ہاں بننے والی فلموں میں جدید ٹیکنالوجی تودکھائی دیتی ہے لیکن اس کی کہانی کوجاندار بنانے اورڈائیلاگ کے ذریعے شائقین کوانٹرٹین کرنے کا رجحان فی الحال فروغ نہیں پا سکا۔جس سے ایک بات ثابت ہوتی ہے کہ کثیرسرمائے اورجدیدٹیکنالوجی فلم کی کامیابی میں کوئی کردارادا نہیں کرتی بلکہ فلم کی کامیابی تواچھی کہانی کے ذریعے ہی ممکن ہوپاتی ہے۔ اگردیکھا جائے توشائقین کواپنی توجہ کا مرکزبنانے کے لئے اس وقت بالی ووڈ میں بننے والی ایکشن فلموں میں اس بات پرخاص توجہ دی جاتی ہے کہ ڈائیلاگ جاندارہوں۔ جب کوئی ہیرو اپنے کردارکی ڈیمانڈ کے مطابق ولن کوللکارتا ہے تو وہ ڈائیلاگ راتوں رات سوشل میڈیا پربھی لوگوں کی توجہ کا مرکز بنتا ہے۔ لیکن بدقسمتی کہہ لیں یا عقل کی کمی کہ ہمارے ہاں فلم میکرز ان باتوں پربالکل بھی توجہ نہیں دیتے۔

danish taimor

دانش تیمورا ور عائزہ خان کی بیٹی حورین کی تیسری سالگرہ

لاہور(فلم رپورٹر)اداکار دانش تیمورا ور عائزہ خان نے اپنی بیٹی حورین کی تیسری سالگرہ شاندار انداز سے منائی۔دونوں فنکار کافی دنوں سے امریکہ میں چھٹیاں منانے گئے ہوئے ہیں جہاں انہوں نے حورین کی سالگرہ بھی منائی۔اس موقع پر دونوں کا کہنا تھا کہ ہماری دعا ہے کہ حورین کو دنیا کی ہر خوشی ملے اور ہماری اولاد ہمیشہ غم سے دور رہے اللہ ہمارے بچوں کا نصیب بلند کرے۔

rose butt

پاکستان فلم انڈسٹری کو مکمل سپورٹ کی ضرورت ہے،روز بٹ

اداکارہ وماڈل روز بٹ نے کہا ہے کہ اس وقت پاکستان فلم انڈسٹری کو مکمل سپورٹ کی ضرورت ہے۔ دنیا میں ہمیشہ وہی لوگ اورقومیں ترقی کرتی ہیں، جویکجا ہوکرملک اورقوم کی بہتری کے لئے کام کریں۔ آج ہم جن ممالک کی مثالیں دیتے ہیں کہ وہاں پرلوگوں کے پاس وسائل ہی وسائل ہیں اوروہ خوش وخرم زندگی بسرکررہے ہیں، ان کی جدوجہد کا جائزہ لیں توایک ہی بات سمجھ میں آتی ہے کہ ان لوگوں نے ایک جاں ہوکربہتری اورترقی کی جانب قدم بڑھایا اورآج سکون اوراطمینان کی زندگی بسرکررہے ہیں۔ لیکن بدقسمتی سے ہمارے ہاں ایسا نہیں ہے۔ روز بٹ نے کہا کہ ہم لوگ ایک دوسرے کوپیچھے چھوڑنے اورراستوں میں رکاوٹیں کھڑی کرنے پر گامزن ہیں۔ اس وقت پاکستان فلم انڈسٹری کو مکمل سپورٹ کی ضرورت ہے۔ ہمارے نوجوان فلم میکرز اپنے قیمتی سرمائے سے فلمیں پروڈیوس کررہے ہیں مگرانہیں سینما گھروں میں وہ رسپانس نہیں ملتا جوغیرملکی پراڈکٹس کودیا جاتا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ میں اس بات کومانتی ہوں کہ ہماری فلمیں فی الوقت انٹرنیشنل معیار کے عین مطابق نہیں ہیں لیکن ان کا معیارماضی کے مقابلے میں بہت اچھا ہوچکا ہے۔ اگران فلموں کو سپورٹ کیا جائے تویہی فلمیں ریکارڈ بزنس کرسکتی ہیں۔ کیونکہ اس وقت دکھائی جانے والی فلموں میں کہانی ، لوکیشن، مزاح اورمیوزک کے ساتھ ساتھ نئے چہروں کا خوبصورت اضافہ بھی شامل ہے۔

لاہور آرٹس کونسل کے زیر اہتمام چلڈرن تھیٹر ورکشاپ 

لاہور آرٹس کونسل الحمراء کے زیر اہتمام چلڈرن تھیٹر ورکشاپ کا آغاز کردیا گیاہے ،15روزہ ورکشاپ میں8سال سے 17سال تک کے بچوں کو سٹیج ڈرامہ اور اداکاری سے متعلق آگاہی دی جائے گی، ورکشاپ کے پہلے روز ایگزیکٹوڈائریکٹر لاہورآرٹس کونسل کیپٹن(ر) عطاء محمدخان نے افتتاحی کلمات میں کہا کہ الحمراء میں اب تک فنون لطیفہ سے متعلق ہر قسم کی کلاسز کا اجراء کیا جاچکا ہے ،بچوں کی اس تربیتی ورکشاپ کی اشد ضرورت محسوس کی جارہی تھی جس کا آغاز کردیا گیاہے اور یہ سلسلہ آئندہ بھی جاری رکھا جائے گا ،صبح 10بجے سے ایک تک جاری رہنے والی اس کلاس میں بچوں کو وقفہ کے دوران مشرابات بسکٹ اور چپس بھی مہیاکئے گئے پہلے دن کی کلاس میں50سے زاہد بچوں نے شرکت کی۔ سٹیج ڈرامہ کے مختلف پہلوؤں سے آگاہ کیا جنہیں بچوں نے بہت دلچسپی سے پرفارم کیا یہ تربیتی ورکشاپ 9 جولائی سے23جولائی تک جاری رہے گی جس کیلئے کسی قسم کوئی فیس مقررنہ ہے۔

خرم ریاض اور شعیب خان کو ’’جیک پاٹ‘‘ کی نمائش پرسینئر فنکاروں کی مبارکباد

فلمساز خرم ریاض اور ہدایتکار شعیب خان کو فلم ’’جیک پاٹ‘‘ کی نمائش پر اداکار محمود اسلم،جان ریمبو، افتخار ٹھاکر، میرا ، زارا شیخ، سنگیتا، حاجی عبدالرشید،جونی ملک، چوہدری اعجاز کامران ،فیصل بخاری، کاشف نثار اور ہدایتکار احسن رحیم سمیت دیگر اہم شخصیات نے مبارکباد دی اور کہا کہ ’’جیک پاٹ‘‘ کو جس طرح سے باکس آفس پر رسپانس مل رہا ہے یہ خوش آئند ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوجوان فلم میکر کو ہی کریڈٹ جاتا ہے جنہوں نے فلم انڈسٹری میں ایک نئی روح پھونکی ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی فلم بینوں نے بھی ثابت کیا ہے کہ وہ پاکستانی فلموں کو بالی وڈ اور ہالی ووڈ پر ترجیح دیتے ہیں حالانکہ سینما آنرز اور بھارتی فلموں کے ڈسٹری بیوٹرزپاکستانی فلموں کو سپورٹ نہیں کر رہے ۔ہدایتکارشعیب خان اور خرم ریاض نے تمام دوستوں کیساتھ میڈیا کو شکریہ ادا کیا جنہوں نے بھرپور تعاون اورسپورٹ کر رہے ہیں۔ 

مزید : ایڈیشن 2


loading...