صوابی ، تحصیل ہسپتال میں سہولیات کا فقدان ، عوام سراپا احتجاج

صوابی ، تحصیل ہسپتال میں سہولیات کا فقدان ، عوام سراپا احتجاج

  



صوابی( بیورورپورٹ)کالو خان ضلع صوابی کے عوام نے تحصیل ہسپتال میں ڈاکٹروں اور طبی سہولیات کی عدم دستیابی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ کٹیگری ڈی کا حامل تحصیل ہسپتال کالو خان میں جب گذشتہ روز دو سالہ قتل شدہ معصوم بچے کی لاش پوسٹ مارٹم کے لئے لائی گئی تو موقع پر ڈاکٹر موجود تھا اور نہ ہی دیگر سٹاف جس کی وجہ سے بچے کی لاش پوسٹ مارٹم کے لئے ضلعی ہسپتال صوابی منتقل کر دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف سفاک ملزمان نے معصوم بچے کو بے دردی سے قتل کر دیا۔ جب کہ دوسری طرف پوسٹ مارٹم کے لئے ہسپتال میں کوئی موجود نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے پولیس کی یقین دہانی پر تین روز کے لئے احتجاج ختم کر دیا ہے یاد رہے کہ گذشتہ روز کالو خان خوڑ میں دو سالہ معصوم بچے خصیم کی لاش ملی تھی جسے نامعلوم ملزمان نے پھانسی دے کر پانی میں پھینک دیا تھا گاؤں کے لوگوں کے مطابق رات بھر لاش کے ساتھ ایک پُر اسرار طور پر سانپ بھی موجود تھا جب اطلاع ملنے پر مقتول کے والدین موقع پر پہنچے تو سانپ بھی غائب ہو گیا۔ اسی طرح وقوعہ کے وقت ضلع صوابی میں رات پونے بارہ بجے ایک زور دار دھماکے کی طرح زلزلہ بھی ہوا تھا جس کی وجہ سے لوگ جاگ کر اُٹھے اور استعفار پڑھنے لگے علاقے کے لوگوں کا کہنا ہے کہ آخر اس معصوم پھول جیسے بچے نے کونسا گناہ کیا تھا کیونکہ دو سال کی عمر میں کوئی بچہ باتیں بھی نہیں کر سکتا ہے #

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...