نیو کراچی میں مبینہ مقابلہ، فائرنگ سے رکشہ ڈرائیور جاں بحق

نیو کراچی میں مبینہ مقابلہ، فائرنگ سے رکشہ ڈرائیور جاں بحق

  



کراچی (کرائم رپورٹر)کراچی میں ایک اور معصوم جان بے رحم گولی کی نظر ہو گئی، شہری سے لوٹ مار کرنے والے ملزمان کی اندھی گولی رکشہ ڈرائیور نفیس خان کی زندگی کا چراغ بجھا گئی۔تفصیلات کے مطابق شہر میں لوٹ مار کی وارداتیں معمول بن گئیں، بدھ کو نیو کراچی کے علاقے میں لوٹ مار کے بعد ملزمان فرار ہو رہے تھے کہ پولیس آپہنچی۔اسی دوران مزاحمت پر چلنے والی اندھی گولی ریٹائرڈ فوجی جوان رکشہ ڈرائیور نفیس خان کی زندگی چراغ گل کر گئی۔نفیس خان کے بیٹے کا کہنا تھا کہ اس کے والد ریٹائرڈ فوجی تھے اور خود کو فٹ اور مصروف رکھنے کے لیے رکشہ چلاتے تھے، پوسٹ مارٹم رپورٹ سے پتا لگے گا کہ چلنے والی گولی پولیس کی تھی یا ڈاکووں کی تھی۔مقتول رکشہ ڈرائیور کے بیٹے نے متعلقہ حکام سے اپیل کی ہے کہ اسے اور اس کے اہل خانہ کو انصاف فراہم کیا جائے۔ایس پی نیو کراچی شبیر احمد کے مطابق 4ملزمان شہری سے موٹر سائیکل چھین رہے تھے کہ اسی دوران پولیس وہاں پہنچی اور اس کا ملزمان کے ساتھ فائرنگ کا تبادلہ ہوا، جس میں ایک گولی نفیس خان کے سر میں لگی،جو جان لیوا ثابت ہوئی۔پولیس کے مطابق 4ملزمان سے 1گرفتار جبکہ 3فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ہیں، بلوچستان سے آپریٹ ہونے والا یہ گینگ موٹرسائیکل لفٹنگ کی وارداتوں میں ملوث ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...