توہین عدالت کی درخواست پر ملزم کے وارنٹ معطل

توہین عدالت کی درخواست پر ملزم کے وارنٹ معطل

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائیکورٹ نے انسداد دہشتگردی کی عدالت کے خلاف توہین عدالت کی درخواست پر ملزم کے وارنٹ معطل کردیئے۔ دو رکنی بینچ کے روبرو انسداد دہشتگردی کی عدالت کے خلاف توہین عدالت کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ وکیل صفائی نے موقف اختیار کیا کہ اے ٹی سی 6 ہائیکورٹ کے فیصلے کے برخلاف کارروائی کر رہی ہے۔ نعیم ساجد پینا کے خلاف اب کوئی مقدمہ زیر سماعت نہیں۔ نعیم ساجد کو سانحہ صفورا میں ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ فوجی عدالت نے قرار دیا کہ ساجد پینا کے خلاف الزامات اس کے دائرہ کار میں نہیں آتے۔ درخواست گزار کو پہلے ہائیکورٹ نے ضمانت پر رہا کیا، پاسپورٹ بھی جمع کرلیا تھا۔ تاہم کسی مقدمے میں ملوث نا ہونے کے باعث پاسپورٹ اور زر ضمانت واپس کردیا تھا۔ لیکن اے ٹی سی 6 ہائیکورٹ کے فیصلے کو غلط قرار دیتے ہوئے ملزم کو طلب کر رہی ہے۔ اے ٹی سی کا رویہ توہین عدالت کے مترادف ہے۔ پراسیکیوٹر نے موقف اپنایا کہ ملزم کے خلاف مقدمہ موجود ہے. اسی لیے عدالت نے وارنٹ جاری کیے۔ ملزم کو اب مقدمے کا علم پو گیا پے تو اب عدالت میں پیش ہوجانا چاہیے۔ وکیل صفائی نے موقف اختیار کیا کہ سینئر وکیل خواجہ شمس الدین علیل ہیں۔ عدالت نے سماعت 8 اگست تک سماعت ملتوی کرتے ہوئے انسداد دہشتگردی کی وارنٹ معطل کردیئے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...