نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر نے ن لیگ کی حکومت کی آخری بجٹ کو غیر حقیقت پسندانہ قرار دے دیا

نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر نے ن لیگ کی حکومت کی آخری بجٹ کو غیر حقیقت ...
نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر نے ن لیگ کی حکومت کی آخری بجٹ کو غیر حقیقت پسندانہ قرار دے دیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن ) نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر (ن) لیگ کی حکومت کے آخری بجٹ کو غیر حقیقت پسندانہ قرار دے دیا۔ان کا کہنا تھا کہ بجٹ میں پیش کردہ اعدادوشمار تشویش ناک ہیں جبکہ مالیاتی خسارہ اور کرنٹ اکاونٹ خسارہ اہداف سے آگے نکل گئے ہیں۔

اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر نے کہا کہ آئی ایم ایف پروگرام کیلئے کام جاری ہے، آنے والی حکومت کو آگاہ کر دیا جائے گا جب کہ سی پیک کا آئی ایم ایف سے کوئی تعلق نہیں۔انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف پروگرام کو بیل آوٹ کہنا مناسب نہیں، فوری طور پر ادائیگیوں کیلئے کوئی دباو نہیں تاہم اگلی سہہ ماہی کیلئے ادائیگیاں کرنا ہوں گے۔

شمشاد اختر نے کہا کہ ملک میں میکرو اکنامک استحکام لانے کی ضرورت ہے، ایس ڈی جیز اہداف حاصل کرنے کیلئے غیر ضروری اخراجات میں کمی لانا ہوگی۔نگران وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ زرمبادلہ کے ذخائر 10 ارب 30 کروڑ ڈالر تک پہنچ گئے۔

مزید : قومی


loading...