ہوٹل کے کمرے میں ٹھہرے مہمان کے دروازے پر رات3 بجے زور سے دستک، دروازہ کھولا تو باہر کھڑی نوجوان لڑکی نے ایسی شرمناک ترین بات کہہ دی کہ ہوش اُڑادئیے کیونکہ۔۔۔

ہوٹل کے کمرے میں ٹھہرے مہمان کے دروازے پر رات3 بجے زور سے دستک، دروازہ کھولا ...
ہوٹل کے کمرے میں ٹھہرے مہمان کے دروازے پر رات3 بجے زور سے دستک، دروازہ کھولا تو باہر کھڑی نوجوان لڑکی نے ایسی شرمناک ترین بات کہہ دی کہ ہوش اُڑادئیے کیونکہ۔۔۔

  



لزبن(نیوز ڈیسک) برطانیہ سے تعلق رکھنے والی ایک نوجوان لڑکی کو آئرلینڈ سے تعلق رکھنے والے نوجوان لڑکے نے پرتگال کے ایک تفریحی مقام پر رات کے تین بجے جنسی ہوس کا نشانہ بنا ڈالا۔ اس افسوسناک واقعے کا انکشاف اس وقت ہوا جب متاثرہ لڑکی نے ہوٹل کے ایک کمرے کا دروزاہ پیٹنا شروع کر دیا اور وہاں ٹھہرے مہمان کو بتایا کہ اس کی عزت لٹ چکی ہے۔

میل آن لائن کے مطابق 30 سالہ برطانوی لڑکی چھٹیاں منانے کے لئے پرتگال گئی ہوئی تھی جہاں پورٹیماﺅ ٹریس کاسٹیلو کے مشہور تفریحی ساحل پر واقع ایک ہوٹل میں اسے زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔ ہوٹل میں ٹھہرے ایک مہمان نے بتایا کہ رات کے تین بجے اس کے کمرے کے دروازے پر زور کی دستک ہوئی۔ جب وہ باہر نکلا تو سامنے ایک لڑکی انتہائی پریشان کن حالت میں کھڑی تھی اور اس کی آنکھیں آنسوﺅں سے تر تھیں۔ لڑکی نے اس شخص کو بتایا کہ ساتھ والے کمرے میں اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی گئی ہے۔ یہ صورتحال سامنے آنے پر پولیس کو اطلاع کی گئی اور چند گھنٹے بعد زیادتی کے مبینہ ملزم کو گرفتار کر لیا گیا۔

ملزم نوجوان کی عمر بھی 30 سال ہے اور اس کا تعلق برطانیہ کے ہمسایہ ملک آئرلینڈ سے ہے۔ نوجوان کا کہناہے کہ اس نے لڑکی سے زیادتی نہیں کی بلکہ دونوں نے رضامندی سے تعلق استوار کیا۔ اس نے بتایا کہ ان کی ملاقات ایک شراب خانے میں ہوئی جہاں سے لڑکی اپنی مرضی سے اس کے ساتھ ہوٹل کے کمرے میں آئی تھی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کا بیان ریکارڈ کر لیا گیا ہے تاہم اصل صورتحال تفتیش مکمل ہونے پر ہی سامنے آئے گی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...