جمہوریت پسندی کا یہ مطلب نہیں کہ ہمارا ووٹ چوری ہو اورہم چپ کر کے بیٹھے رہیں:سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھر

جمہوریت پسندی کا یہ مطلب نہیں کہ ہمارا ووٹ چوری ہو اورہم چپ کر کے بیٹھے ...
جمہوریت پسندی کا یہ مطلب نہیں کہ ہمارا ووٹ چوری ہو اورہم چپ کر کے بیٹھے رہیں:سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھر

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان پیپلز پارٹی نے رزلٹ ٹرانسمیشن سسٹم کی ناکامی کے تنازعے پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ آر ٹی ایس کے متعلق الیکشن کمیشن کے دعوؤں کو میڈیا نے جھٹلا دیا ہے،میڈیا میں آر ٹی ایس سسٹم کے بند کئے جانے کی خبریں ہمارے موقف کی تائید ہیں،ہماری جمہوریت پسندی کا یہ مطلب نہیں کہ الیکشن کمیشن کی ناک کے نیچے ہمارا ووٹ چوری ہو ہم چپ کر کے بیٹھے رہیں۔

تفصیلات کے مطابق بلاول بھٹو زرداری کے ترجمان اور پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھر نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کو ملک بھر سے انتخابات کے روز دھاندلی کی شکایت موصول ہوتی رہی ہیں اور ہمارے امیدوار شکایت کرتے رہے کہ انکے پولنگ ایجنٹس کو اندر داخل ہونے نہیں دیا جا رہا یا نکالا جا رہا ہے، چیئرمین بلاول بھٹو کے لیاری، لاڑکانہ اور مالاکنڈ کے حلقوں میں بھی یہی رویہ اختیار کیا گیا،الیکشن کمیشن نے آٹھ روز بعد بلاول بھٹو کے لیاری کے حلقے کے فارم پینتالیس دئے گئے۔ سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر کا کہنا تھا کہ لاڑکانہ کے فارم 45 تین دنوں بعد ملے جبکہ ملاکنڈ سے ابھی تک نہیں ملے،لاڑکانہ میں بھی کارکنوں کے شدید احتجاج کے بعد فارم 45 دئے گئے۔انہوں نے کہا کہ دیگر سیاسی جماعتوں سے الیکشن کمیشن کے خلاف ایسی ہی شکایات موصول ہو رہی ہیں،الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے کہ  وہ جائزہ لے اور سیاسی جماعتوں کی شکایات دور کریں، ہم اس وقت تک چپ کر کے نہیں بیٹھیں گے جب تک الیکشن کمیشن  شکایات کے خلاف ہمیں ٹھوس ثبوت نہیں دے گا۔سینیٹر مصطفی نواز کھوکھر کا کہنا تھا کہ ہم جمہوریت میں یقین رکھتے ہیں اور نظام کا تسلسل چاہتے ہیں لیکنہماری جمہوریت پسندی کا مطلب یہ نہیں ہے کہ الیکشن کمیشن کے ناک کے نیچے ہمارا ووٹ چوری ہو اور  ہم چپ کر کے بیٹھے رہیں۔

مزید : قومی


loading...